Monday , February 19 2018
Home / Top Stories / رئیل اسٹیٹ تاجر مصطفی پر فائرنگ ‘ زخمی کوخود حملہ آوروں نے دواخانہ منتقل کیا

رئیل اسٹیٹ تاجر مصطفی پر فائرنگ ‘ زخمی کوخود حملہ آوروں نے دواخانہ منتقل کیا

پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلیا ‘ ملزمین کے کرناٹک میں روپوش ہونے کا شبہ ‘ گرفتاری کیلئے چھ ٹیموں کی تشکیل
حیدرآباد ۔12نومبر ( سیاست نیوز) کنگس کالونی میلاردیو پلی میں رئیل اسٹیٹ تاجر مصطفی پر فائرنگ کے واقعہ میں پولیس نے زبیر اور دیگر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا اور حملہ آوروں کی تلاش کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ۔ ابتدائی تحقیقات میں معلوم ہوا کہ حملہ آوروں نے مصطفیٰ پر مبینہ طور پر ریوالور سے فائرنگ کی اور اسے ویرنچی ہاسپٹل بنجارہ ہلز میں بھرتی کروایا اور راہ فرار اختیار کرلی ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ گرفتاری کیلئے اسپیشل آپریشن ٹیم و میلاردیوپلی پولیس کی خصوصی چھ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں اور پولیس کو شبہ ہے کہ حملہ آور کرناٹک فرار ہوگئے ہیں ۔ فائرنگ واقعہ کے بعد زبیر اور دیگر ساتھی اپنے موبائیل فون پر مسلسل ایک دوسرے سے ربط میں رہے اور تلنگانہ سرحد پار کرنے کے بعد موبائیل فون بند کردیا ۔ پولیس ٹیموں نے کرناٹک کے کئی علاقوں میں دھاوے شروع کردئے ہیں اور ان کی تلاش جاری ہے ۔

تحقیقات میں پتہ لگا ہے کہ زبیر اور اس کے دیگر ساتھیوں نے بحث و تکرار کے بعد مصطفیٰ پر فائرنگ کردی تھی اور خود اس واقعہ کے بعد پریشان ہوکر اسے ویرنچی دواخانہ فارچیونر کار میں منتقل کیا اور بعد ازاں فرار ہوگئے ۔ پولیس میلار دیو پلی نے حملہ آوروں کے خلاف تعزیرات ہند 307 ( اقدام قتل) اور انڈین آرمس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے ویرنچی ہاسپٹل پہنچی جہاں سے تحقیقاتی عہدیداروں کو اہم شواہد حاصل ہوئے ۔ ذرائع نے بتایا کہ پولیس دواخانہ کے سی سی ٹی وی کیمرہ فوٹیج حاصل کرنے میںکامیاب ہوگئی اور اس کے تجزیہ سے یہ صاف ظاہر ہوتا ہے کہ مصطفیٰ کو زخمی حالت میں دواخانہ لایا گیا اور بعد ازاں حملہ آور کار میں فرار ہوگئے ۔ پولیس نے سی سی ٹی وی کیمروں کا ڈی وی آر ( ہارڈ ڈسک ) ضبط کرلیا ہے اور تحقیقات جاری ہیں ۔کمشنر پولیس سائبرآباد سندیپ شنڈیلیہ نے بتایا کہ اس کیس کی تحقیقات کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں اور زخمی نوجوان کا بیان قلمبند کرنے کی کوشش جاری ہے ‘ لیکن وہ زیر علاج ہونے کی وجہ سے پولیس اس کا بیان حاصل نہ کرسکی ۔ انہوں نے کہا کہ مصطفیٰ کے بیان اور حملہ آوروں کو حراست میں لئے جانے کے بعد اس فائرنگ واقعہ کے پس پردہ حقائق کا پتہ چل سکے گا ۔ پولیس اس بات کا پتہ لگانے کی کوشش کررہی ہے کہ کیا حالیہ دنوں کنگس کالونی میں ہوئے انکم ٹیکس عہدیداروں کے دھاؤں سے متعلق تنازعہ تو نہیں ہے یا اثاثہ جات سے متعلق خفیہ تفصیلات آئی ٹی عہدیداروں کو فراہم کئے جانے کے شبہ کا نتیجہ تو نہیں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT