رائنا کی سنچری‘ ہندوستان نے زمبابوے کو 6وکٹس سے ہرایا

آکلینڈ۔14مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) سریش رائنا نے شاندار سنچری اسکور کرتے ہوئے ٹاپ آرڈر بیٹسمین کی ناکامی کا اثر ختم کیا اور ٹیم کو کمزور زمبابوے کے خلاف 6وکٹس سے کامیابی دلائی ۔ جاریہ ورلڈ کپ میں ہندوستان کی متواتر کامیابیوں کا سلسلہ اب تک جاری ہے ۔ رائنا کے 110 ناٹ آؤٹ اور کپتان مہیندر سنگھ دھونی کے اہم 85رنز کی بدولت ہندوستان نے 48.4 اوورس

آکلینڈ۔14مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) سریش رائنا نے شاندار سنچری اسکور کرتے ہوئے ٹاپ آرڈر بیٹسمین کی ناکامی کا اثر ختم کیا اور ٹیم کو کمزور زمبابوے کے خلاف 6وکٹس سے کامیابی دلائی ۔ جاریہ ورلڈ کپ میں ہندوستان کی متواتر کامیابیوں کا سلسلہ اب تک جاری ہے ۔ رائنا کے 110 ناٹ آؤٹ اور کپتان مہیندر سنگھ دھونی کے اہم 85رنز کی بدولت ہندوستان نے 48.4 اوورس میں 288کا نشانہ پور کرلیا ۔ ورلڈ کپ میچ میں اب تک سب سے زیادہ رنز کے تعاقب کا بھی ایک نیا ریکارڈ قائم ہوا ہے ۔ دفاعی چمپئن گروپ بی لیک کے تمام 6میچز میں کامیاب رہی اور دو ایڈیشن میں متواتر10کامیابیوں کے ساتھ ویسٹ انڈیز کے کلائیو لائیڈ کا ریکارڈ توڑ دیا ہے ۔ 1975ء پروڈنشیل کپ کے آغاز کے ساتھ ویسٹ انڈیز کی کامیابی کا سلسلہ شروع ہوا اور مسلسل 9میچز میں وہ فتح یاب رہی تھی ۔ 1983ء ایڈیشن کے پہلے میچ میں اسے اولڈ ٹریفورڈ میں ہندوستان کے خلاف پہلی شکست ہوئی تھی ۔ اس وقت سب سے زیادہ متواتر کامیابیوں کا ریکارڈ آسٹریلیا کے پاس ہے ۔ 1999ء اور 2011ء ایڈیشن کے دوران رکی پونٹنگ کی کپتانی میں ٹیم نے متواتر 24کامیابیاں حاصل کی تھیں ۔

دفاعی چمپئن ہندوستان کا کوارٹر فائنل میں بنگلہ دیش سے مقابلہ ہوگا جو 19مارچ کو ملبورن کرکٹ گراؤنڈ پر کھیلا جائے گا ۔ ہندوستان کی ٹیم ایک مرحلہ پر 92/4 پر پہنچ گئی تھی ‘ اس وقت کپتان دھونی نے رائنا کے ساتھ ملکر اننگز کو سنبھالا اور پانچویں وکٹ کی رفاقت میں 156 گیندوں میں 196 رنز جوڑے ۔سریش رائنا جنہوں نے اپنی پانچویں ونڈے سنچری بنائی ‘ اس میں 9چوکے اور 4چھکے شامل ہیں ۔ ان کی پہلے 50رنز 67گیندوں میں بنے اور بعد کے 50رنز صرف 27 گیندوں میں بنے ۔ سریش رائنا جس وقت 47کے انفرادی اسکور پر تھے سکندر رضا کی گیند پر ہیملٹن مساکڈزا نے شارٹ لیگ پر ان کے کیچ چھوڑ دیا ۔ دھونی نے 76 گیندوں میں 8چوکے اور 2چھکے لگاتے ہوئے 57ویں نصف سنچری پوری کی ۔ہندوستان کی شروعات انتہائی ناقص رہی اور اوپنرس روہت شرما (16) ‘ شکھر دھون (4) پر پویلین لوٹ گئے ان کے بعد ویراٹ کوہلی نے 37رنز بنائے لیکن اجنکیا راہنے 19پر آؤٹ ہوگئے ۔ اس کے بعد دھونی اور رائنا نے ٹیم کو سنبھالا اور کامیابی سے ہمکنار کیا ۔

قبل ازیں برینڈن ٹیلر نے زمبابوے کیلئے آخری ونڈے میں زبردست اننگز کھیلی ۔ انہوں نے 138 رنز بنائے جس کی بدولت ٹیم 48.5 اوورس میں 287( آل آؤٹ) کا اسکور کھڑا کرسکی ۔ ٹیلر نے 110گیندوں میں 15چوکے اور 5چھکے لگاتے ہوئے اننگز کو یادگار بنادیا تھا ۔ انہوں نے ابتدائی نصف سنچری جہاں 64گیندوں میں بنائی وہیں بعد کے 88رنز صرف 46گیندوں میں بنائے ۔ یہ ان کی آٹھویںاور کسی زمبابوے بیٹسمین کی اعظم ترین سنچری ہے ۔ اس کے علاوہ ورلڈ کپ میں ہندوستان کے خلاف پہلی سنچری تھی ۔ آج انہیں ہندوستانی شائقین کے علاوہ سریش رائنا ‘ ویراٹ کوہلی اور شکھر دھون نے خراج تحسین پیش کیا کیونکہ 29سالہ ٹیلر کا یہ وداعی میچ تھا ۔ وہ مالی مجبوریوں کی بناء انگلینڈ میں مستقل سکونت اختیار کررہے ہیں ۔ آج کے میچ میں ٹیلر نے ہندوستانی اسپنرس کی جم کر پٹائی کی اور روی چندرن آشون نے 10اوورس میں 1/75 ‘رویندر جڈیجہ نے 0/71 رنز دیئے ۔ تاہم فاسٹ بولروں نے بہترین بولنگ کی ۔

TOPPOPULARRECENT