Tuesday , September 25 2018
Home / اضلاع کی خبریں / رائچور میں ریت کی غیر قانونی کان کنی کو روکنے سخت اقدامات

رائچور میں ریت کی غیر قانونی کان کنی کو روکنے سخت اقدامات

گلبرگہ /18 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )وزیر اعلیٰ سدرامیا نے آج سندھنور تعلقہ کے ایک ہیلی پیڈ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ رائچورضلع میں غیر قانونی ریت کان کنی کے معاملات کی بے شمار شکایات حکومت کو موصول ہو چکی ہیں اور حکومت ان معاملات کی سی آئی ڈی سے تحقیقات کرائے گی اور خاطیوں کو قرار واقعی سزا دی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ سی ا

گلبرگہ /18 فروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )وزیر اعلیٰ سدرامیا نے آج سندھنور تعلقہ کے ایک ہیلی پیڈ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ رائچورضلع میں غیر قانونی ریت کان کنی کے معاملات کی بے شمار شکایات حکومت کو موصول ہو چکی ہیں اور حکومت ان معاملات کی سی آئی ڈی سے تحقیقات کرائے گی اور خاطیوں کو قرار واقعی سزا دی جائے گی۔انھوں نے کہا کہ سی آئی ڈی چند اضلاع میں اس قسم کے معاملات کی پہلے ہی سے تحقیقات کر رہی ہے اور اس میں اب رائچور ضلع کو بھی شامل کرلیے جانے کا انھیں حکم دیا جائے گا۔انھوں نے مزید کہا کہ اس سلسلے میں رکن اسمبلی رمیش کمار کی قیادت میں ایک مطالعاتی کمیٹی قائم کی جائے گی جو سروے کرنے کے بعد مناسب اقدامات اٹھائیں گے ۔انھوں نے کہا کہ حکومت ریت کی کان کنی کے لیے ریت کے نئے بلاکس کی نشاندہی کرے گی اور اس طرح قیمتوں کو معمول پر لایا جائے گا۔واضح رہے کہ ریت کی غیر قانونی کان کنی کو روکنے کا فیصلہ حکومت نے ماحولیات کو درپیش خطرات کے سدباب کے لیے کیا تھا اور اس پر سختی سے عمل پیرا ہے ۔نیز حکومت نے اس کی خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمتنے کا بھی عملی مظاہرہ کیا ہے۔انھوںنے مزیدکہا کہ علاقہ حیدرآباد کرناٹک میں مخلوعہ 31ہزار سرکاری جائیدادوں کو پُر کیے جانے کے لیے حکومت عملی اقدامات کر رہی ہے اور بہت جلد اس سلسلے میں اعلامیہ جاری کر دیا جائے گا۔انھوں نے کہا کہ دفع 371jکے تحت اس علاقے کے عوام کو ان کا صحیح اور مناسب حق دلوایا جائے گا۔یہ پوچھے جانے پر کہ انا بھاگیہ اسکیم کے اجناس کو کالے بازار میں فروخت کیے جانے اور اس کی قیمتوں میں اچانک اضافے سے غریبوں کو دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے انھوں نے کہا کہ میں نے اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کو سخت ہدایات دی ہیں اور اس سلسلے میں کسی قسم کی کوئی نرمی نہیں برتی جائے گی اور خاطیوں کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔انھوں نے کہا کہ وہ متعلقہ افسران اور وزرا سے بات کرتیہوئے تنگبھدرا سے رائچور ضلع کے لیے پینے کے پانی کی سربراہی کے مستقل انتظامات کے جانے کے سلسلے میں ہدایات جلد ہی جاری کریں گے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT