Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / رائے دہی کے دن امریکہ پر حملے کئے جائیں

رائے دہی کے دن امریکہ پر حملے کئے جائیں

دولت اسلامیہ کی جنگجوؤں سے اپیل ‘ ٹوئیٹر پر 7صفحات کا مضمون شائع ‘ حقیقت زیرغور
واشنگٹن۔6نومبر( سیاست ڈاٹ کام ) دولت اسلامیہ نے امریکہ میں رائے دہی کے دن ’’ قتل عام ‘‘ کی اپیل کرتے ہوئے مسلمانوں پر زور دیا ہے کہ وہ اس جمہوری عمل میں شرکت نہ کریں ۔ امریکہ میں قائم دہشت گردی کے نگران کار گروپ کے بموجب ڈائرکٹر ایس ٹی ٹی ای انٹلیجنس گروپ رٹزکیٹزنے اپنے ٹوئیٹر پر کہا کہ یہ دھمکیاں ایک مضمون میں جو دولت اسلامیہ کے ذرائع ابلاغ مرکز الحیات سے شائع کیا گیا ہے ‘ شامل ہیں ۔ عسکریت پسند آپ کو ذبح کرنے کیلئے رائے دہی کے ڈبے تباہ کرنے کیلئے آچکے ہیں ۔ یہ انتباہ سات صفحات پر مشتمل مضمون کا ایک حصہ ہے ۔ اس مضمون کا عنوان ’’ مرتاد ووٹ ‘‘ رکھا گیا ہے ۔ یہ مضمون جس میں طویل مذہبی دلائل پیش کئے گئے ہیں تاکہ ان حملوں کو جائز قرار دیا جاسکے ۔ یہ بھی اعلان کرتا ہے کہ ری پبلکن اور ڈیموکریٹک پارٹیوں میں جو بھی اختلاف ہیں وہ اُن کی اسلام اور مسلمانوں کے خلاف پالیسیوں کے بارے میں ہیں ۔ کیٹز نے مضمون کے اقتباسات ٹیوٹر پر پیش کئے ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ دولت اسلامیہ حملوں کی رائے دہی کے دن ترغیب دے رہی ہے تاکہ انتخابی عمل میں خلل اندازی پیدا کی جائے اور ذرائع ابلاغ کی توجہ حاصل کی جائے ۔

پورا مضمون انگریزی میں ہے اس میں ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ ‘ڈیموکریٹ پارٹی کے نائب صدر کے نامزد شخش ٹم کین کے علاوہ خضر خان کی ایک تصویر بھی شامل ہے ۔ وہ ایک امریکی فوجی کا والد ہے جو اس لڑائی میں ہلاک کردیا گیا ۔ امریکی دستور کی ایک نقل ڈیموکریٹک پارٹی کے قومی کنونشن کے دوران تقریر میں ڈرامائی طور پر استعمال کرنے کا بھی تذکرہ ہے ۔ ووٹ سے متعلق امکانی دھمکیوں کے بارے میں وفاقی عہدیدار القاعدہ کے امکانی انٹرنیٹ حملوں کے بارے میں جو امریکہ پر انتخابات کے دن کئے جاسکتے ہیں جائزہ لے رہے ہیں ۔ یہ حملے وفاقی اور ریاستی نفاذ قانون عہدیداروں کے پیش نظر بھی ہیں ۔ دھمکی حقیقی ہے یا نہیں اس کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ ’’یو ایس اے ٹوڈے ‘‘ کے ایک عہدیدار نے کہا کہ انسداد دہشت گردی اور اندرون ملک سلامتی کیلئے طبقات نے چوکسی اختیار کرلی ہے اور حملوں کے خلاف دفاع کا مکمل طور پر انتظام کرلیا گیا ہے ۔ اس بارے میں ایف بی آئی کی جانب سے جاری کردہ بیان میں تمام متعلقہ افراد سے چوکسی کی اپیل کی گئی ہ

TOPPOPULARRECENT