راجا پکسے مستعفی ‘ وکرما سنگھے آج وزارت عظمیٰ کا حلف لینگے

کولمبو 15 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام سری لنکا میں اقتدار کی رسہ کشی کو ختم کرتے ہوئے وزیر اعظم کی حیثیت سے مہندا راجا پکسے نے استعفی پیش کردیا ہے اور اب رانیل وکرما سنگھے امکان ہے کہ دوسری مرتبہ وزیر اعظم کی حیثیت سے کل حلف لیں گے ۔راجا پکسے کو صدر ایم سری سینا نے متنازعہ انداز میں ملک کا وزیر اعظم نامزد کردیا ہے ۔ سپریم کورٹ کی جانب سے دو اہم فیصلوں کے بعد راجا پکشے نے اپنے عہدہ سے استعفی دیدیا ہے ۔ دونوں ہی فیصلے راجا پکسے کے خلاف آئے ہیں۔ موافق راجہ پکشے قانون ساز شیہان سیما سنگھے نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سابق صدر نے اپنے عہدہ سے استعفی پیش کردیا ہے انہوں نے کہا کہ راجا پکسے نے یونائیٹیڈ پیپلز فریڈم الائنس کے ارکان پارلیمنٹ سے کہا ہے کہ وہ مستعفی ہوچکے ہیں۔ راجا پکسے کو 26 اکٹوبر کو صدر مملکت سری سینا نے ایک متنازعہ اقدام میں ملک کا وزیر اعظم نامزد کردیا تھا اور وکرما سنگھے کو برطرف کردیا تھا ۔ اس فیصلے کے بعد سے ملک میں زبردست دستوری بحران شروع ہوگیا تھا ۔ سپریم کورٹ نے جمعرات کو اتفاق رائے سے فیصلہ میں اعلان کیا کہ سری سینا کی جانب سے پارلیمنٹ کی تحلیل غیر دستوری تھی ۔ عدالت نے جمعہ کو ایک فیصلے پر حکم التوا جاری کرنے سے بھی انکار کردیا تھا جس میں راجا پکسے کو آئندہ احکام تک وزارت عظمی کا کام کاج سنبھالنے سے روک دیا گیا تھا ۔ وکرما سنگھے کی یونائیٹیڈ نیشنل پارٹی نے ہفتے کو کہا تھا کہ سری سینا نے وکرما سنگھے کو دوبارہ ملک کا وزیر اعظم بنانے سے اتفاق کرلیا ہے جب دونوں کے مابین فون پر بات چیت ہوئی تھی ۔ یو این پی کے جنرل سکریٹری اے وی کریاواسم نے بتایا کہ ہمیں صدارتی سکریٹریٹ سے اطلاع ملی ہے کہ وکرما سنگھے کو اتوار کی صبح وزیر اعظم کی حیثیت سے حلف دلایا جائیگا ۔ ملک میں جو سیاسی اور دستوری بحران 26 اکٹوبر کو وکرما سنگھے کی برطرفی اور راجا پکشے کے تقرر سے شروع ہوا تھا ایسا لگتا ہے کہ اب وہ ختم ہوگیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT