Monday , September 24 2018
Home / ہندوستان / راجستھان : آرڈیننس پر حکم التواء سے عدالت کا انکار

راجستھان : آرڈیننس پر حکم التواء سے عدالت کا انکار

جئے پور۔/15جنوری، ( سیاست ڈاٹ کام ) راجستھان ہائی کورٹ نے آج مجالس مقامی کے انتخابات میں امیدواروں کی تعلیمی قابلیت کے تعین سے متعلق ریاستی حکومت کے آرڈیننس میں فی الفور مداخلت سے انکار کردیا اور کہا کہ چونکہ انتخابی عمل شروع ہوچکا ہے لہذا درخواست گذاروں کو چاہیئے کہ قطعی احکامات تک انتظار کریں۔ راجستھان میں مجالس مقامی کے انتخابا

جئے پور۔/15جنوری، ( سیاست ڈاٹ کام ) راجستھان ہائی کورٹ نے آج مجالس مقامی کے انتخابات میں امیدواروں کی تعلیمی قابلیت کے تعین سے متعلق ریاستی حکومت کے آرڈیننس میں فی الفور مداخلت سے انکار کردیا اور کہا کہ چونکہ انتخابی عمل شروع ہوچکا ہے لہذا درخواست گذاروں کو چاہیئے کہ قطعی احکامات تک انتظار کریں۔ راجستھان میں مجالس مقامی کے انتخابات تین مرحلوں میں منعقد ہوں گے اور پہلے مرحلہ کی رائے دہی کل عمل میں آئے گی اور درخواست گذاروں سے پنچایت انتخابات کے اعلان کے ایک دن قبل آرڈیننس کی اجرائی کو عدالت میں چیلنج کیا اور انہیں انتخابات میں حصہ لینے کیلئے آرڈیننس کے خلاف حکم التواء کی گذارش کی ہے۔چیف جسٹس سنیل امباوانی اور جسٹس پرکاش گپتا پر مشتمل بنچ نے کہا کہ انتخابی عمل شروع ہونے کے بعد عدالت مداخلت کی مجاز نہیں ہوسکتی کیونکہ یہ انتخابات دستور کے تباع ہیں۔ عدالت نے کہا کہ نہ ہی درخواست گذار اور نہی ہی مدعی علیہ ( ریاستی حکومت ) نے یہ اعداد و شمار پیش کرنے سے قاصر ایک آرڈیننس کے ذریعہ تعلیمی قابلیت کو لازمی قرار دینے پر کتنے امیدوار انتخابی مقابلہ سے محروم ہوگئے اور اس خصوص میں قطعی فیصلہ کیس کی سماعت مکمل ہونے کے بعد ہی صادر کیا جائے گا اور آئندہ سماعت 3مارچ تک ملتوی کردی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT