راجستھان میں لوجہاد کے نا م پر ایک او رقتل ‘ لڑکی کے گھروالوں نے دوسرے مذہب کے لرکے کو بری طرح تشدد کرکے مارڈالا

مقتول سیف علی اپنے والدین کا اکلوتا چشم وچراغ تھا‘ بیکانیر میں لڑکی کے گھر واوں نے منصوبہ بند طریقے سے سیف علی کے اغواء کے بعد بے دردی سے زدکوب کرنے کے بعد اد مری حالت میں گندے نالے میں پھینک دیا‘ ملزمین حراست میں پولیس پوچھ تاچھ میں مصروف
بیکانیر۔ ایک ہندو لڑکی کے گھر والوں نے ایک مسلم لڑکے کو بری طرح تشدد کانشانہ بناکر مارڈالا۔

ہند و لڑکی مسلم لڑکے سیف علی سے شادی کی خواہش مند تھی اور اسی وجہہ سے لڑکی کے گھر والوں نے منصوبہ بند طریقے سے پہلے اس کو اغوا کیا بعد میں اسے تشدد کانشانہ بنایا۔ پولیس نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ سیف علی کو مذکورہ لڑکی کے ساتھ تعلقات کی جہہ سے پیٹ پیٹ کر مارڈالا گیا۔

اطلاع کے مطابق سیف علی عمر 22سال پھل مارکٹ میں کام کرتاتھا اور وہ اپنے والدین کا اکلوتا چشم وچراغ تھا ۔

وہ منگل کے روز رات میں9بجے رام پورہ بستی میں لڑکی سے ملنے گیاتھا۔بیکانیر کے پولیس سپریڈنٹ سوائی سنگھ گودار نے کہاکہ لڑکی کے گھر والوں نے سیف علی کو پیٹنے کا منصوبہ تیار کیاتھا۔

پولیس کے مطابق لڑکی کے گھر والے سیف علی کو کرنی انڈسٹریل ایریا ایک کار میں لے گئے اور اس ھر بری طرح تشدد کرکے اس کے دونوں پاؤں توڑ دئے اوراسے گندے پانی کے تالاب میں پھینک دیا ۔

ایس پی سوائی سنگھ نے کہاکہ’ہماری ٹیم موقع پر پہنچی‘ جہاں اس نے سیف کو بازیاب کیا اور اسے اسپتال میں داخل کرایا‘ اس کے دونوں پاؤں بری طرح مسخ کردئے گئے تھے‘ ڈاکٹروں نے اس کااعلان کیالیکن وہ جانبر نہیں ہوسکا۔

اس سلسلہ میں لڑکی کزن بنٹی ‘ شیو ‘مالی ‘ راجہ سونا‘ گوپال کھاٹی‘ ببلو‘ مالی او رمزیددو افراد کے خلاف قتل ‘ اغوا اور دیگر دفعات کے تحت ایف ائی آر درج کرلی گئی ہے اور انہیں حراست میں لے لیاگیا ہے۔ ایس پی نے مزیدکہاکہ ملزمین سے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے او رانہیں جلد ہی گرفتار کیاجائے گا۔

نہو ں نے سیف علی کے گھر والوں کو بھی جس معاملہ میں منصفانہ تفتیش کی یقین دہانی کرائی ہے۔ گذشتہ روز سیف علی کی ‘ تدفین عمل میں ائی ہے۔

سیف علی کے ایک دوست نے کہاکہ لڑکی اس بات کی خواہش مند تھی کہ وہ سیف علی سے شادی کرے جبکہ سیف مسلمان ہونے کی وجہہ سے اس بارے میں تشویش میں مبتلا تھا۔وہ اس لئے بھی شادی نہیں کرنا چاہتا تھا کیونکہ وہ گھر میں اکیلا کمانے والا تھا۔

یا درہے کہ اس سے قبل ارجسمند میں محمد افرزال کو لوجہاد کے الزام میں شمبھولال ریگر نام کے ایک شخص نے درندگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے موت کا گھاٹ اتاردیاتھا۔ گذشتہ سال الور ضلع میں گاؤ رکشکوں نے مویشی تاجر پہلو خان کو بھی پیٹ پیٹ کر ہلاک کرڈالاتھا

TOPPOPULARRECENT