Monday , April 23 2018
Home / ہندوستان / راجستھان میں 3 برسوں میں زدوکوبی کا صرف ایک واقعہ: ہنس راج

راجستھان میں 3 برسوں میں زدوکوبی کا صرف ایک واقعہ: ہنس راج

نئی دہلی۔7 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) راجیہ سبھا میں آج مملکتی وزیر داخلہ ہنس راج اہیر نے بیان دیتے ہوئے کہا کہ راجستھان میں گزشتہ تین برسوں کے دوران اقلیتوں پر زدوکوب کا صرف ایک واقعہ پیش آیا ہے۔ راجیہ سبھا میں تحریری طور پر پوچھے گئے ایک سوال پر کہ آیا 2015 سے جنوری 2016ء تک اقلیتوں کے ساتھ مابلنچنگ کے متواتر واقعات پیش آرہے ہیں؟ انہوں نے کہا کہ ایسا نہیں ہے بلکہ راجستھان پولیس کی جانب سے نیشنل کرائم بیورو کو فراہم کیے گئے تفصیلات کے مطابق 2015ء تک مابلنچنگ کا صرف ایک واقعہ پیش آیا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ اس واقعہ میں ایک فرد کو ہلاک کردیاگیا تھا جس کے بعد اس سلسلہ میں 8 افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔ جبکہ 2016ء میں اس قسم کے کوئی کیسس میں درج نہیں کیے گئے۔ انہوں نے کہا کہ دستور کی 7 ویں شیڈول کے مطابق نظم و نسق کی برقراری اور عوامی زندگی کی حفاظت ریاستی حکومتوں کی ذمہ داری ہے اور ریاستی حکومتیں اس معاملہ میں مناسب کارروائی کررہی ہے ۔ ہنس راج اہیر نے مزید کہا کہ ریاستی حکومتیں مذکورہ قوانین پر عمل کرتے ہوئے سماج دشمن عناصر سے نمٹنے میں مصروف ہیں۔

 

 

TOPPOPULARRECENT