Tuesday , November 20 2018
Home / ہندوستان / راجیو گاندھی قتل کیس ملزمین کی رہائی کی درخواست مرکز کو روانہ نہیں کی گئی

راجیو گاندھی قتل کیس ملزمین کی رہائی کی درخواست مرکز کو روانہ نہیں کی گئی

چینائی۔ 15 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) گورنر ٹاملناڈو بنواری لال پروہت نے بعض میڈیا رپورٹ جس میں راجیو گاندھی قتل کیس کے ساتوں مجرمین کی رہائی کی درخواست گورنر کی جانب سے مرکز کو روانہ کردی گئی ہے، گمراہ کن قرار دیا۔ گورنر نے کہا کہ اس مسئلہ پر فیصلہ بالکل جانبداری اور دستور کے مطابق کیا جائے گا۔ راج بھون کی جانب سے جاری کئے گئے ایک پریس نوٹ میں یہ بات کہی گئی ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ میڈیا کے علاوہ بعض ٹی وی چیانلس بھی اس موضوع کو لے کر مختلف مفروضات اور مباحث میں مصروف ہیں اور وضاحت کردی کہ اس سلسلے میں وزارت داخلہ کو لے کر کسی قسم کی رپورٹ روانہ نہیں کی گئی۔ جوائنٹ ڈائریکٹر راج بھون پبلک ریلیشنس آفیسر کے مطابق یہ موضوع بالکل پیچیدہ ہے کیونکہ اس سلسلے میں قانونی، انتظامی اور دستوری اُمور کو ملحوظ رکھنا ہے۔ ریاستی حکومت کی جانب سے راج بھون کو کوئی بھی ریکارڈ موصول نہیں ہوا ہے، سوائے عدالتی فیصلہ کی کاپی کی جو 14 ستمبر کو وصول ہوئی ہے۔ راج بھون کے مطابق تمام اہم دستاویزات کو لے کر اگر ممکن ہوتو رائے مشورہ کیا جائے گا اور بہت ہی جانبداری ہے اور دستوری بنیاد پر اس کا فیصلہ کیا جائے گا۔ 9 ستمبر کو ٹاملناڈو کابینہ نے راجیو گاندھی قتل کیس کے تمام 7 ملزمین جس میں نلینی اور اس کا شوہر سری ہری مروگن بی شامل ہیں اور تمام 7 ملزمین 1991ء سے جیل میں عمر قید کی سزا کاٹ رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT