Tuesday , September 25 2018
Home / سیاسیات / راجیہ سبھا انتخابات :امیدواروں کا پرچہ نامزدگی داخل

راجیہ سبھا انتخابات :امیدواروں کا پرچہ نامزدگی داخل

پٹنہ12مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بہار میں راجیہ سبھا کی چھ نشستوں کے انتخابات کے لئے قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے ) اور راشٹریہ جنتا دل کی قیادت والے ‘مھاگٹھ بندھن’ کی جانب سے تین تین امیدواروں نے آج آخری دن پرچہ نامزدگی داخل کیا۔این ڈی اے کی اہم حلیف بی جے پی کی جانب سے مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد اور جنتا دل یونائٹیڈ (جے ڈی یو) کی جانب سے پارٹی کے ریاستی صدر وششٹھ نارائن سنگھ اور صنعتکار مہندر پرساد سنگھ عرف کنگ مہندر نے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔ دوسری طرف عظیم اتحاد کی اہم حلیف راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کی جانب سے ، اس کے قومی ترجمان منوج جھا اور کٹیہار میڈیکل کالج کے مینیجنگ ڈائریکٹر اشفاق کریم اور کانگریس کی جانب سے سابق مرکزی وزیر اکھلیش پرساد سنگھ نے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔سب سے پہلے آر جے ڈی کی جانب سے مسٹر جھا اور مسٹر کریم نے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔ اس کے بعد کانگریس کے مسٹر سنگھ نے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔ اس موقعہ پر آر جے ڈی کی قومی نائب صدر رابڑی دیوی، پارٹی کے ریاستی صدر رام چندر پوروے ، سابق وزیر صحت تیج پرتاپ یادو، کانگریس کے کار گزار ریاستی صدر کوکب قادری، سابق وزیر وجے شنکر دوبے اور سینئر لیڈر پریم چندر مشرا موجود تھے ۔راجیہ سبھا انتخابات کے لئے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کا آج آخری دن ہے ۔پرچہ نامزدگی کی جانچ 13 مارچ کو ہوگی اور امیدوار 15 مارچ تک اپنانام واپس لے سکیں گے ۔ اسمبلی میں تعدادکے لحاظ سے حکمران این ڈی اے اور اپوزیشن مھاگٹھ بندھن کو تین تین نشستیں آسانی سے مل جائیں گی۔ اگر ساتویں امیدوار کے طور پر کوئی نامزدگی کرے گا، تو اس صورت میں 23 مارچ کو پولنگ کی نوبت آئے گی۔ 15 اپریل کو خالی ہونے والی راجیہ سبھا کی تمام چھ نشستیں حکمراں جماعت کی ہیں، اس لئے اس بار اپوزیشن آر جے ڈی اور کانگریس کو فائدہ ہورہا ہے ۔ بہار سے راجیہ سبھا میں کانگریس کا ایک بھی نمائندہ راجیہ سبھا میں نہیں تھا، اس بار مسٹر اکھلیش سنگھ کی صورت میں کانگریس کو بھی نمائندگی حاصل ہوجائے گی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT