Friday , November 24 2017
Home / سیاسیات / راجیہ سبھا انتخابات ‘ جے ڈی ایس کے 8 ارکان کی کراس ووٹنگ

راجیہ سبھا انتخابات ‘ جے ڈی ایس کے 8 ارکان کی کراس ووٹنگ

کانگریس امیدوار کی تائید میں ووٹ ۔ کمارا سوامی و دیوے گوڑا پر مطلق العنانی کا الزام
بنگلورو 11 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) کرناٹک میں پارٹی وہپ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جنتادل ( ایس ) کے آٹھ ارکان اسمبلی نے آج اپنی پارٹی کے سرکاری امیدوار کے خلاف ووٹ دیا اور کانگریس کی تائید کی ۔ کرناٹک سے راجیہ سبھا کی چار نشستوں کو پر کرنے رائے دہی ہوئی تھی ۔ جے ڈی ایس کے ترجمان رمیش بابو نے کہا کہ آٹھ ارکان اسمبلی نے آج راجیہ سبھا انتخابات میں جے ڈی ایس کے خلاف اور کانگریس کی تائید میں ووٹ کا استعمال کیا ہے ۔ کل پارٹی کے ایک اجلاس میں ہم ان تمام کے خلاف کارروائی کرینگے ۔ یہ کارروائی پارٹی دستور کے مطابق ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ جن ارکان اسمبلی نے آج پارٹی امیدوار کے خلاف ووٹ دیا ہے ان میں ضمیر احمد خاں ‘ چالورایا سوامی ‘ اقبال انصاری ‘ بالا کرشنا ‘ رمیش بندی سدی گوڑا ‘ گوپالیا ‘ بھیما نائک اور اکھنڈا سرینواس مورتی شامل ہیں۔ انہوں نے انتخابی نتیجہ کے اعلان سے قبل ہی اپنی پارٹی کی شکست قبول کرلی ۔ ناراضگیوں کا شکار جے ڈی ایس نے بی ایم فاروق کو اپنا امیدوار نامزد کیا تھا ۔ جے ڈی ایس لیڈر و سابق چیف منسٹر ایچ ڈی کمارا سوامی نے باغیوں کو پارٹی کیلئے کینسر قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں ان کا علاج ڈھونڈنا چاہئے ۔ پہلے ہی کافی تاخیر ہوگئی ہے اور یہ بیماری آخری مرحلہ میں پہونچنے سے قبل ہمیں اس کا علاج دریافت کرلینا چاہئے ۔ پارٹی کے ناراض ارکان اسمبلی نے کانگریس کے حق میں ووٹ دینے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی قائدین کمارا سوامی اور ایچ ڈی دیوے گوڑا کا رویہ ان کی کراس ووٹنگ کیلئے ذمہ دار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی نے جس امیدوار کو میدان میں اتارا تھا اس کے تعلق سے ہمیں اعتماد میں نہیں لیا تھا ۔ ایک اور ناراض رکن ضمیر احمد خان نے بھی اسی طرح کی وجہ بیان کی اور کہا کہ اگر پارٹی کو کسی اقلیتی لیڈر کو ہی امیدوار نامزد کرنا تھا تو پارٹی میں ہی کئی قائدین موجود تھے کسی کو باہر سے لانے کی ضرورت نہیں تھی ۔ پارٹی قائدین کو اس معاملہ میں نظر انداز کردیا گیا

TOPPOPULARRECENT