Tuesday , September 25 2018
Home / سیاسیات / راجیہ سبھا میں مرکزی وزیر اننت کمار کے ریمارک پر ہنگامہ

راجیہ سبھا میں مرکزی وزیر اننت کمار کے ریمارک پر ہنگامہ

نئی دہلی 24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام )حکومت کو پشیمانی سے دوچار کرتے ہوئے متحدہ اپوزیشن نے آج راجیہ سبھا میں مرکزی وزیر کے ریمارک کے خلاف شدید احتجاج کیا جس پر مجبور ہوکر مرکزی وزیر کو اپنے الفاظ واپس لینے پڑے ۔ اپوزیشن کا خیال ہے کہ مرکزی وزیر کے یہ ریمارک نہ صرف توہین آمیز ہے بلکہ پارلیمنٹ کے معیار کے مغائر ہے ۔ تنازعہ اس وقت پیدا ہوا جب

نئی دہلی 24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام )حکومت کو پشیمانی سے دوچار کرتے ہوئے متحدہ اپوزیشن نے آج راجیہ سبھا میں مرکزی وزیر کے ریمارک کے خلاف شدید احتجاج کیا جس پر مجبور ہوکر مرکزی وزیر کو اپنے الفاظ واپس لینے پڑے ۔ اپوزیشن کا خیال ہے کہ مرکزی وزیر کے یہ ریمارک نہ صرف توہین آمیز ہے بلکہ پارلیمنٹ کے معیار کے مغائر ہے ۔ تنازعہ اس وقت پیدا ہوا جب مرکزی وزیر کمیکل و فرٹیلائزر اننت کمار نے جنتادل یو کے رکن کے سی تیاگی پر فقرہ کستے ہوئے کہا کہ ایوان کے اندر ہر کوئی کسانوں کے مسائل پر تشویش اظہار کرتا ہے جبکہ تیاگی کو اپنی فکر لگی ہوئی ہے انہیں کسانوں کی فکر نہیں ہے۔ تیاگی نے کسانوں کے مسائل پر جاری بحث میں حصہ لیتے ہوئے خاص عام آدمی پارٹی کی ریالی میں ایک کسان کی خودکشی کے خلاف احتجاج کے دوران انہوں نے حکمراں پارٹی کے خلاف بعض ریمارکس کئے اور سوال کیا کہ آیا حکومت نے کسانوں کی بھلائی کیلئے کچھ کیا ہے۔ انہوں نے بی جے پی صدر کا بھی نام لیا جس پر مرکزی وزیر نے اعتراض کیا ۔ اننت کمار نے اپنے الفاظ واپس لیا کیونکہ ڈپٹی چیر مین راجیہ سبھا پی جی کورین نے بھی اننت کمار کی ان کے ریمارکس پر سرزنش کی تھی۔ اس مسئلہ پر اپوزیشن کے شور و غل کے بعد مجبورا وزیر کو اپنے الفاظ واپس لینے پڑے ۔ تیاگی نے کہا کہ مرکزی وزیر نے جس طرح کا لب و لہجہ استعمال کیا ہے میں انہیں کسانوں کا ہمدرد نہیں سمجھتا ۔ سیتا رام یچوری نے بھی وزیر کے ریمارک پر اعتراض کیا اور کہا کہ کسانوں کے مسائل پر صرف اپنے احساسات ظاہر کرنا ہے نہ کہ کسی کو شخصی ریمارک کرنے کی اجازت نہیں۔

TOPPOPULARRECENT