Sunday , January 21 2018
Home / سیاسیات / راجیہ سبھا میں یو پی ایس سی تنازعہ پر شوروغل

راجیہ سبھا میں یو پی ایس سی تنازعہ پر شوروغل

نئی دہلی۔ 4 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن نے آج حکومت پر یو پی ایس سی امتحان تنازعہ کے سلسلے میں تنقید میں شدت پیدا کرتے ہوئے راجیہ سبھا مراعات شکنی کی ایک نوٹس پیش کردی اور اس مسئلہ کی قطعی تعین مدت کے ساتھ یکسوئی کا مطالبہ کرتے ہوئے اجلاس ملتوی کردینے پر مجبور کردیا۔ وقفۂ صفر کے دوران مسئلہ اُٹھاتے ہوئے جے ڈی (یو) کے شرد یادو نے حکوم

نئی دہلی۔ 4 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن نے آج حکومت پر یو پی ایس سی امتحان تنازعہ کے سلسلے میں تنقید میں شدت پیدا کرتے ہوئے راجیہ سبھا مراعات شکنی کی ایک نوٹس پیش کردی اور اس مسئلہ کی قطعی تعین مدت کے ساتھ یکسوئی کا مطالبہ کرتے ہوئے اجلاس ملتوی کردینے پر مجبور کردیا۔ وقفۂ صفر کے دوران مسئلہ اُٹھاتے ہوئے جے ڈی (یو) کے شرد یادو نے حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ اپنے وعدہ سے انحراف کررہی ہے۔ کانگریس، سی پی آئی ایم، سی پی آئی، جے ڈی یو، ترنمول کانگریس اور سماج وادی پارٹی بھی اس مسئلہ پر متحد ہوگئے ہیں۔ مرکزی وزیر مملکت پرکاش جاؤدیکر نے برہم ارکان کو مطمئن کرنے کی کوشش کی اور کہا کہ حکومت مسئلہ کی یکسوئی کے لئے کوشاں ہے اور ایوان کو حل تلاش کرنے کے بعد اطلاع دی جائے گی لیکن اپوزیشن ارکان نے قطعی مدت کے تعین پر اصرار جاری رکھا اور صدرنشین سے خواہش کی کہ وہ اس سلسلے میں حکومت کو ہدایت دیں۔ اپوزیشن ارکان نے مرکزی وزیر ڈی او پی ٹی جیتندر سنگھ پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اندرون 8 دن مسئلہ کی یکسوئی کا تیقن دینے کے باوجود 12 دن گزرنے کے بعد بھی مسئلہ کی یکسوئی سے قاصر ہے۔ اپوزیشن ارکان کے مطالبہ کی شدت اور حکومت کی جانب سے ان کو مطمئن کرنے کی ہر کوشش ناکام ہونے کے بعد نائب صدرنشین راجیہ سبھا نے اجلاس 2 بجے دن تک کیلئے ملتوی کردیا۔

TOPPOPULARRECENT