Friday , May 25 2018
Home / ہندوستان / راجے کے 4 سالہ دور اقتدار سے گہلوٹ غیر متاثر

راجے کے 4 سالہ دور اقتدار سے گہلوٹ غیر متاثر

جئے پور۔13 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر راجستھان وسندھرا راجے پر ان کے دور حکومت کے 4 سال کی تکمیل پر تنقید کرتے ہوئے کانگریس قائد اشوک گہلوٹ نے آج کہا کہ انہوں نے ریاست کو اپنے دور اقتدار میں پسماندگی کی دلدل میں ڈھکیل دیا ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ بدعنوانی اور عقرباپروری جرائم جیسے کمسن لڑکیوں کی عصمت ریزیاں اور قتل کی وارداتیں بی جے پی کے 4 سالہ دور اقتدار میں روز کا معمول بن گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے اپنے 50 سالہ سیاسی کیریئر کے دوران ایسی غیر ذمہ دارانہ اور بیکار حکومت نہیں دیکھی۔ ریاستی وزیر داخلہ اور وزیر صحت کو شرم آنی چاہئے کہ وہ اس حکومت کا حصہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ وسندھرا راجے جانتی ہیں کہ یہ بحیثیت چیف منسٹر ان کی آخری میعاد ہے۔ چنانچہ بدعنوانیاں عروج پر ہیں اور چیف منسٹر کے دفتر کی سطح پر فیصلے کیے جارہے ہیں۔ حالانکہ فیصلے وزارتی سطح پر کیئے جانے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام میں برہمی پھیلی ہوئی ہے اور وہ اس سے واقف ہیں۔ کل ہند کانگریس کے جنرل سکریٹری، سابق چیف منسٹر راجستھان نے حکومت پر الزام عائد کیا کہ اس نے غیر ملکی دوروں پر اور راجستھان میں برگشتہ سرمایہ کاروں کی چوٹی کانفرنس کے نام پر کروڑوں روپئے ضائع کردیئے۔ ریاستی حکومت کانکنی اسکام کی سی بی آئی یا عدالتی تحقیقات کروانے کے لیے بھی تیار نہیں ہے۔ انہو ںنے کہا کہ اگر ایسا ہوجائے تو راجستھان حکومت کے بدعنوانی کے معاملات بے نقاب ہوجائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT