Monday , September 24 2018
Home / سیاسیات / راج ناتھ سنگھ کی شخصی بول بالا تبصرہ پر راہول گاندھی کی مذمت

راج ناتھ سنگھ کی شخصی بول بالا تبصرہ پر راہول گاندھی کی مذمت

نئی دہلی۔ 6 اگست (سیاست ڈاٹ کام) راہول گاندھی کی اس تنقید پر کہ ملک میں ایک ہی شخص کا بول بالا ہے، جوابی تنقید کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی ’’نہ تو آمرانہ طور طریقے رکھتے ہیں اور نہ فرقہ پرستانہ‘‘۔ پورا ملک جانتا ہے کہ وزیراعظم نہ تو آمر ہیں نہ فرقہ پرست، اگر وہ آمر یا فرقہ پرست ہوتے تو ا

نئی دہلی۔ 6 اگست (سیاست ڈاٹ کام) راہول گاندھی کی اس تنقید پر کہ ملک میں ایک ہی شخص کا بول بالا ہے، جوابی تنقید کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی ’’نہ تو آمرانہ طور طریقے رکھتے ہیں اور نہ فرقہ پرستانہ‘‘۔ پورا ملک جانتا ہے کہ وزیراعظم نہ تو آمر ہیں نہ فرقہ پرست، اگر وہ آمر یا فرقہ پرست ہوتے تو اتنے بڑے ملک کے عوام انہیں آزاد ہند کی تاریخ میں پہلی بار اتنی اکثریت سے برسراقتدار نہ لاتے۔ ایک غیرکانگریسی سیاسی پارٹی پارلیمنٹ میں واضح اکثریت رکھتی ہے، اُن سے راہول گاندھی کے لوک سبھا میں جانبداری کے الزام کے بارے میں سوال کیا گیا تھا، جو مباحث کی اجازت نہ دینے پر راہول گاندھی نے کیا تھا۔ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ اس معاملے کا تعلق ایوان سے ہے اور اگر اس بات کا نوٹ لیا جاتا ہے تو ایسا اسپیکر کریں گی۔ نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے قبل ازیں دن میں لوک سبھا کے وسط میں پہنچ کر فرقہ وارانہ کشیدگی کے موضوع پر مباحث کا مطالبہ کیا تھا اور مودی حکومت پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ پارلیمنٹ میں مباحث کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں صرف ایک شخص کا بول بالا ہے، ہمیں پارلیمنٹ میں بات کرنے کی اجازت بھی نہیں دی جاتی۔ ہم صرف مباحث کا مطالبہ کررہے ہیں، لیکن حکومت کی یہ ذہنیت ہے کہ مباحث ناقابل قبول ہیں۔ ہر شخص کا احساس ہے کہ ایک ہی شخص کا بول بالا ہے، پارٹی میں بھی یہی احساس ہے، ہم بھی یہی محسوس کرتے ہیں، ہر شخص کا یہی احساس ہے۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے وقفہ سوالات کے دوران راجیہ سبھا میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ دہلی پولیس فورس کا ایک تہائی خواتین پر مشتمل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ دہلی پولیس کے ارکان عملہ میں خواتین کی تعداد میں اضافہ کرکے اسے جملہ پولیس فورس کا ایک تہائی کردیا جائے۔ ہماری کوشش ریاستی پولیس اور مرکزی پولیس میں خواتین کی تعداد ایک تہائی کردینا ہے۔ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ ریاستی اور مرکزی پولیس کے علاوہ پولیس کی دیگر تنظیموں میں بھی ایک تہائی تعداد خواتین پر مشتمل ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT