Wednesday , September 19 2018
Home / سیاسیات / راج ٹھاکرے کا یو ٹرن، مہاراشٹرا اسمبلی انتخابات لڑنے سے انکار

راج ٹھاکرے کا یو ٹرن، مہاراشٹرا اسمبلی انتخابات لڑنے سے انکار

ناگپور ۔ 25 ۔ اگست (سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹرا نو نرمان سینا کے سربراہ راج ٹھاکرے نے اچانک یو ٹرن لیتے ہوئے اسمبلی انتخابات میں مقابلہ کرنے کے امکان کو یکسر خارج کردیا ہے اور کہا ہے کہ وہ اپنے آپ کو کسی ایک حلقہ تک محدود رکھنا نہیں چاہتے۔ انہوں نے گزشتہ رات ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ریاست مہاراشٹرا کا سارا حلقہ ان کا اپنا حلقہ ہے، لہذا میں اپنے آپ کو کسی ایک حلقہ انتخابات تک محدود نہیں رکھنا چاہتا۔ لوک سبھا انتخابات میں زبردست ہزیمت کا سامنا کرنے کے بعد راج ٹھاکرے قبل ازیں اعلان کیا تھا کہ وہ اور ان کی پارٹی ریاست کے اسمبلی انتخابات کا مقابلہ کریں گے۔ راج ٹھاکرے نے مبینہ طور پر یہ بھی کہا تھا کہ اگر ریاست میں ان کی پارٹی بہتر مظاہرہ کرتی ہے تو وہ ریاست کے چیف منسٹر بھی بن سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ ریاست کے عوام ہم سے بے پناہ محبت کرتے ہیں اور ہماری پارٹی سے ان کے بے شمار توقعات بھی وابستہ ہیں۔ لہذا اگر رائے عامہ ہماری پارٹی کے حق میں آتی ہیں تو میں ریاست کی قیادت کرنے میں ہچکچاہٹ محسوس نہیں کروں گا۔ ایم این ایس سربراہ جو گزشتہ رات شہر میں اپنے امیدواروں کے ناموں کو قطعیت دینے کیلئے موجود تھے، نے کہا کہ وہ اکتوبر میں منعقد ہونے والے اسمبلی انتخابات کیلئے پوری ریاست سے 62 نشستوں میں سے 40 تا 45 امیدواروں کو مقابلہ کیلئے میدان میں اتار رہے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں راج ٹھاکرے نے چیف منسٹر چوان کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر کا فیصلہ حق بجانب ہے، دراصل ان سے یہ سوال نریندر مودی کے سامنے اپوزیشن چیف منسٹروں کے خلاف بی جے پی کارکنوں کی نعرے بازی پر سوال کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT