Tuesday , November 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / راشن دکانات پر بائیو میٹرک مشین کی ناقص کارکردگی

راشن دکانات پر بائیو میٹرک مشین کی ناقص کارکردگی

سرور ڈاؤن کی وجہ سے غریب عوام حصول راشن سے محروم

نیالکل۔ 24 اگست (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حکومت کی جانب سے نوٹ بندی جی ایس ٹی کے اثرات مکمل طور پر ختم ہی نہیں ہوئے۔ عوام پر ایک نئی مصیبت ڈال دی گئی۔ ضلع سنگاریڈی حلقہ اسمبلی ظہیرآباد نیالکل مگڑم پلی جھرہ سنگم دیگر علاقوں کے ارزاں فروشی دوکانات پر بائیو میٹرک مشین متعارف کی گئی اور اس ماہ سے عوام کو بائیو میٹرک مشین کے ذریعہ راشن سربراہی کرنے کی باضابطہ طور پر محکمہ سیول سپلائیز نے ہدایت دی لیکن بائیومیٹرک مشین کی ناقص کارکردگی سرور ڈاؤن افراد خاندان کی عدم شناخت اور بائیومیٹرک مشین کی انتہائی سست رفتار کی وجہ سے غریب عوام حصول راشن سے محروم ہوگئے ہیں۔ غریب خواتین اور ضعیف افراد گھنٹوں لمبی قطاروں میں ٹھہرانے کے باوجود چاول راشن حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ نمائندہ سیاست نے مختلف ارزاں فروشی کی دوکانات کا دورہ کرتے ہوئے عوام سے تفصیلات طلب کیں۔ عوام نے سیاست نیوز کو بتایا کہ بائیومیٹرک مشین کے سبب اس ماہ کا آخری مرحلہ چل رہا ہے اور انہیں ابھی تک راشن کی سربراہی عمل میں نہیں لائی گئی جس سے غریب عوام کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔ جبکہ راشن کی دوکانات پر شکر، گیہوں، تیل اور دیگر غذائی اجناس کی سربراہی کئی ماہ سے بند ہے اور حصول چاول کیلئے بھی سخت دشواریاں اٹھانی پڑ رہی ہے۔ راشن ڈیلرس سے پوچھنے پر انہوں نے بتایا کہ بائیومیٹرک مشین کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے فی کارڈ ہولڈر اس اندراج کیلئے کافی وقت درکار ہورہا ہے۔ صبح سے شام تک 10 افراد کو بائیومیٹرک مشین کے ذریعہ چاول مہیا کیا جارہا ہے۔ عوام نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ راشن کی سربراہی میں پیش آنے والے مسائل کی فوری یکسوئی کرے۔

 

TOPPOPULARRECENT