Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / راشن شاپس سے اشیا ضروریہ کی بجائے نقد رقم کی فراہمی پر غور

راشن شاپس سے اشیا ضروریہ کی بجائے نقد رقم کی فراہمی پر غور

رقم کی کارڈ ہولڈرس کے اکاؤنٹ میں منتقلی کا جائزہ لینے عہدیداروں کو چیف منسٹر کی ہدایت
حیدرآباد 21 اکٹوبر ( سیاست نیوز ) چیف منسٹر کے سی آر نے ریاست کی تمام راشن شاپس کو بند کرکے اشیاضروریہ پر خرچ کیے جانے والے سالانہ 6,500 کروڑ روپئے راست طور پر نقد رقم کی شکل میں راشن کارڈ ہولڈرس کے بینک اکاونٹ میں جمع کرانے کے امکان کا جائزہ لینے کا عہدیداروں کو مشورہ دیا ۔ چیف منسٹر نے پرگتی بھون میں محکمہ سیول سپلائز کے اعلیٰ عہدیداروں کا اجلاس طلب کیا ۔ جس میں راشن شاپس کے ذریعہ غریب عوام میں تقسیم کی جانے والی اشیاء ضروریہ کی بدعنوانیوں اور بے قاعدگیوں کو کنٹرول کرنے اور راشن ڈیلرس کی بلیک میل وغیرہ کا بھی جائزہ لیا گیا ۔ راشن ڈیلرس کی جانب سے ہڑتال کرنے کی دھمکیوں پر بھی غور و خوص کیا گیا ۔ راشن شاپس کے استفادہ کنندگان کو راحت فراہم کرنے والی اسکیم تیار کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ ہر سال 6500 کروڑ روپئے خرچ کرکے غریب عوام کو راشن کارڈس کے ذریعہ اشیا ضروریہ تقسیم کی جارہی ہے ۔ اس اسکیم میں بے قاعدگیوں اور بدعنوانیوں کا خاتمہ کرنے جدید ٹکنالوجی سے استفادہ کیا جارہا ہے ۔

باوجود اس کے توقع کے مطابق نتائج برآمد نہیں ہورہے ہیں ۔ عوام حقوق سے محروم ہورہے ہیں ۔ چاول مافیا سرکاری عہدیداروں سے ساز باز کرکے چاول کے بشمول دوسری اشیاء ضروریہ کی بلیک مارکیٹنگ کررہے ہیں جن اغراض و مقاصد کیلئے اسکیم روشناس کرائی گئی ہے اس کے ثمرات غریب عوام تک نہیں پہونچ رہے ہیں ۔ اس اسکیم پر عمل آوری کیلئے سیول سرویس کے بشمول دوسرے کئی عہدیدار خدمات انجام دے رہے ہیں اور کروڑہا روپئے خرچ کئے جارہے ہیں باوجود اس کے اشیا ضروریہ کی اسکیم راستہ بھٹک رہی ہے اور اس اسکیم میں مافیا سرگرم ہوگیا ہے ۔ چاول کی غیر قانونی منتقلی کے کئی واقعات منظر عام پر آرہے ہیں اتنی بھاری رقم خرچ کرنے اور عہدیداروں کی جانب سے دن رات محنت کے باوجود مثبت نتائج برآمد نہ ہونا تکلیف دہ بات ہے ۔ غریبوں کیلئے خرچ کیا جانے والا ہر روپیہ صد فیصد ان کیلئے قابل استعمال بنانا ضروری ہے ۔ اس لیے بہتر نظام تیار کرنے عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ عہدیداروں نے چیف منسٹر کو مشورہ دیا کہ اشیاء ضروریہ پر خرچ کی جانے والی رقم راست راشن کارڈ ہولڈرس کے اکاونٹ میں جمع کردی جائے ۔ چندر شیکھر راؤ نے اشیا ضروریہ اور نقد رقم منتقلی کا تفصیلی جائزہ لے کر انہیں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی اور عہدیداروں کو بتایا کہ اشیاء ضروریہ کے بجائے نقد رقم منتقل کرنے کی اسکیم ملک کے مختلف مقامات چندی گڑھ، پڈوچیری ، دادراو نگر حویلی میں چند ماہ سے عمل کی جارہی ہے اس کا بھی جائزہ لینے کا مشورہ دیا ۔

TOPPOPULARRECENT