Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / راشن چاول کی کالا بازاری جاری ، انسدادی اقدامات بے اثر

راشن چاول کی کالا بازاری جاری ، انسدادی اقدامات بے اثر

محکمہ سیول سپلائز کی چوکسی کے باوجود دھاندلیاں برقرار ، شہر کے 20 دکانات کی نشاندہی
حیدرآباد۔20فروری(سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ کی جانب سے محکمہ سیول سپلائز کے ذریعہ ارزاں فروشی کی دکانات پر فروخت کئے جانے والے سبسیڈی والے راشن کی تقسیم کو بہتر بنانے اور شفافیت کے اقدامات کو یقینی بنانے کے لئے کئے گئے متعدد اقدامات کے باوجود بھی راشن میں فروخت کئے جانے والے چاول کی کالا بازاری میں کوئی روک نہیں لگ پائی ہے! محکمہ سیول سپلائز کی جانب سے آدھار سے مربوط راشن کی تقسیم کے اقدامات کے ذریعہ کالابازاری پر روک لگانے کے متعدد اقدامات کرتے ہوئے کئی فرضی راشن کارڈس کو برخواست کیا گیا تھا لیکن اس کے باوجود چاول کی کالا بازاری کاسلسلہ جاری رہنے کے سبب محکمہ سیول سپلائز میں کھلبلی پیدا ہوچکی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ریاستی حکومت کی جانب سے محکمہ سیول سپلائز کو اس بات کی ہدایت جاری کی گئی ہے کہ وہ راشن کارڈ کی تنقیح کے ساتھ ساتھ اب ارزاں فروشی کی دکانات چلانے والوں کی سرگرمیوں کا جائزہ لیں اور جو انگوٹھے کے نشان حاصل کئے جا رہے ہیں ان کارڈ گیرندوں کی تفصیلات بھی حاصل کرنے کے علاوہ ان کی جانب سے راشن کی خریدی کی تفصیلات کا جائزہ لیتے ہوئے ان لوگوں کے خلاف کاروائی کا عمل شروع کریں جو لوگ کالا بازاری میں ملوث ہیں۔محکمہ سیول سپلائز نے راشن شاپ کے ذریعہ فروخت کئے جانے والی اشیاء کی کالا بازاری کو روکنے کے لئے کئی ایک اقدامات کو ممکن بنایا ہے لیکن اس کے باوجود کی جانے والی کالابازاری کو روکنے کیلئے محکمہ کی جانب سے اب خفیہ اطلاعات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے کیونکہ محکمہ کو موصولہ اطلاعات کے مطابق راشن کی دکانات پر فروخت کئے جانے والے چاول و دیگر اشیاء کو شہر سے اضلاع کو روانہ کیا جا رہاہے اور دیہی علاقو ںمیں ان چاولوں کو 10گنا زائد قیمت پر فروخت کیا جارہاہے ۔ بتایاجاتاہے کہ محکمہ کی جانب سے اضلاع اور دیہی علاقوں میں بھی ان دکانات کی تفصیلات اکٹھا کی جا رہی ہیں جہاں راشن شاپ پر فروخت کئے جانے والے چاول کو کھلے بازار میں اضافی قیمت میں فروخت کیا جا رہاہے اور اس بات کا پتہ چلانے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ انہیں یہ چاول کہاں سے حاصل ہورہا ہے اور کو ن یہ چاول سربراہ کر رہاہے ؟باوثوق ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق تاحال شہر حیدرآباد میں 20ایسی راشن شاپس کی محکمہ کی جانب سے نشاندہی کی گئی ہے جو فئیر پرائس شاپ پر فروخت کئے جانے والے چاول کو ٹھوک بازار میں فروخت کرنے کی مرتکب بن رہی ہیں لیکن ابھی تک ان دکانات کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی گئی کیونکہ محکمہ سیول سپلائز کی جانب سے انہیں رنگے ہاتھوں پکڑنے کے اقدامات کئے جا رہے ہیں اور کہا جا رہاہے کہ ان دکانات کو مشتبہ راشن کی دکانات کی فہرست میں شامل کیا جا چکا ہے جو کالا بازاری جیسی غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہیں۔

TOPPOPULARRECENT