رام مندر پر بی جے پی ۔ شیوسینا کی سیاسی شعبدہ بازی

ناکامیوں سے عوام کی توجہ ہٹانے زعفرانی جماعتوں کی کوشش: مایاوتی
نئی دہلی 24 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بہوجن سماج پارٹی کی سربراہ مایاوتی نے بی جے پی اور شیوسینا کو لوک سبھا انتخابات سے قبل رام مندر مسئلہ اُٹھانے پر سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے الزام عائد کیاکہ یہ دراصل ان دونوں جماعتوں کی ناکامیوں سے عوام کی توجہ ہٹانے کی ایک ’سیاسی شعبدہ بازی‘ ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ یہ مسئلہ چونکہ سپریم کورٹ میں زیردوران ہے، مختلف تنظیموں اور جماعتوں کو چاہئے کہ اس انداز میں یہ مسئلہ نہ اُٹھائیں بلکہ فیصلہ کا انتظار کریں۔ بی ایس پی کی سربراہ نے میڈیا نمائندوں کے روبرو اپنا بیان پڑھتے ہوئے کہاکہ ’وہ اپنی ناکامیوں سے توجہ ہٹانے کے لئے رام مندر کا مسئلہ اُٹھارہے ہیں۔ اگر ان جماعتوں کے نیک ارادے ہوتے تو اُنھیں ایسا کہنے کے لئے پانچ سال انتظار کرنے کی ضرورت نہ پڑتی۔ یہ مخض ان کی سیاسی شعبدہ بازی ہے اور اس کے سواء کچھ نہیں ہے جو کچھ ان (بی جے پی) کے ساتھی جیسے شیوسینا اور وی ایچ پی کررہے ہیں وہ دراصل اپنی سازش کے ایک حصہ کے طور پر کررہے ہیں‘۔ مختلف تنظیموں نے ایودھیا میں رام مندر کی عاجلانہ تعمیر کے لئے مختلف پروگرامس منعقد کررہی ہیں۔ اترپردیش کی سابق چیف منسٹر مایاوتی نے اپنی پارٹی کے کارکنوں پر زور دیا کہ وہ بھیم آرمی جیسی تنظیموں سے دور رہیں جو چندے وصول کرنے اور ریالیوں میں عوام کو جمع کرنے مبینہ طور پر ان کی جماعت بی ایس پی کا نام استعمال کررہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT