Tuesday , December 18 2018

رام مندر کی تعمیر کیلئے حکومت کے پاس 2019 تک کافی وقت موجود

لکھنو17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام )آر ایس ایس نے آج کہا کہ حکومت کے پاس ایودھیا میں رام مندر تعمیر کرنے کیلئے 2019 تک کافی وقت موجود ہے حکومت کی اپنی ترجیحات ہیں اور وہ ان کے مطابق کام کرتی ہے ۔ راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ (آر ایس ایس ) کے جوائنٹ جنرل سکریٹری دتاتریہ ہوسابالے نے آر ایس ایس اکھل بھارتیہ کاریہ کاری منڈل کے پہلے دن پریس کانفرنس سے خط

لکھنو17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام )آر ایس ایس نے آج کہا کہ حکومت کے پاس ایودھیا میں رام مندر تعمیر کرنے کیلئے 2019 تک کافی وقت موجود ہے حکومت کی اپنی ترجیحات ہیں اور وہ ان کے مطابق کام کرتی ہے ۔ راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ (آر ایس ایس ) کے جوائنٹ جنرل سکریٹری دتاتریہ ہوسابالے نے آر ایس ایس اکھل بھارتیہ کاریہ کاری منڈل کے پہلے دن پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ رام مندر ملک کے ایجنڈہ میں موجود ہے۔ یہ قومی مفاد میں ہے ہم وی ایچ پی اور مذہبی قائدین کی رام مندر کی تعمیر کے مسئلہ پر تائید کرتے رہے ہیں۔ جب یہ نشاندہی کی گئی کہ بی جے پی کہہ رہی تھی کہ اگر مرکز میں قطعی اکثریت کے ساتھ وہ برسر اقتدار آجائے تو رام مندر کی تعمیر کی راہ ہموار کرے گی۔ اس سلسلہ میںایک قانون منظور کیا جائے گا اس سوال پر کہ کیا آر ایس ایس اس کا مطالبہ کرے گی ۔ ہوسا بالے نے کہا کہ رام مندر کا مسئلہ پہلے ہی انتخابی منشور میں موجود ہے ۔ دہشت گرد تنظیموں بشمول القاعدہ اور آئی ایس آئی ایس کے خطرے کے بارے میں سوال پر انہوں نے کہا کہ اجلاس میں قومی صیانت کے مسائل پر بھی تبادلہ خیال کیا جائے گا ۔ تاہم انہوں نے اپنے بیان کی وضاحت نہیں کی۔

’’لو جہاد‘‘کے بارے میں تبادلے خیال سے متعلق ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ہوسا بالے نے کہا کہ گذشتہ 10 سال کے دوران اس پر کافی تبادلے خیال ہوچکا ہے ۔ اجلاس میں معاشی اور سیاسی قرار دادوں کی منظوری کے امکان کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نئی حکومت ابھی ابھی قائم ہوئی ہے ہم پہلے اس کی کارکردگی کا مشاہدہ کریں گے ۔ یہ دعوی کرتے ہوئے کہ آر ایس ایس کارکنوں نے راحت رسانی اور بچاو کارروائیوں میں آفات سماوی کے شکار جموں و کشمیر ،آندھرا پردیش اور میگھالیہ میں کافی سرگرمی سے کام کیا ہے ۔ ہوسا بالے نے کہا کہ باز آبادکاری کے کام کا ایک خاکہ ان علاقوں کے بارے میں تیار کرلیاگیا ہے ۔ جس پر اجلاس میں تبادلے خیال کیا جائے گا۔ یہ کہتے ہوئے کہ آر ایس ایس جو خصوصی پروگرام شروع کرے گی اس میں بہتر شہری احساس پیدا کرنا، صفائی اور ماحولیات کے بارے میں شعور کی بیداری بھی شامل ہوگی۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ان کی تنظیم سالانہ 20 فیصد کی شرح سے فروغ پذیر ہے اور جاریہ سال ایک لاکھ پچیس ہزار سے زیادہ سوئم سیوکوں نے اس کے بنیادی تربیتی پروگرام میں شرکت کی ہے ۔ ہوسا بالے نے کہا کہ تین روزہ اجلاس کے دوران 390 پرچارک اور قومی عہدیدار مختلف شعبوں میںاپنے کاموں کی تفصیل سے واقف کروائیں گے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT