Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / ’’رام مندر کے مخالف مسلمان، پاکستان چلے جائیں‘‘ : وسیم رضوی

’’رام مندر کے مخالف مسلمان، پاکستان چلے جائیں‘‘ : وسیم رضوی

فیض آباد ۔ /3 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیرمین وسیم رضوی نے کہا ہے کہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے مخالف مسلمانوں کوپاکستان یا بنگلہ دیش چلے جانا چاہئیے ۔ سپریم کورٹ میں /8 فبروری سے بابری مسجد ۔ رام جنم بھومی تنازعہ پر سماعت مقرر ہے ۔ رضوی نے ایودھیا کے متنازعہ مقام پر نماز جمعہ ادا کی اور رام جنم بھومی کے پجاری سے ملاقات کی ۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ’’جو بھی ایودھیا میں رام مندر کی مخالفت کرتے ہیں اور وہاں بابری مسجد کی تعمیر چاہتے ہیں ایسی بنیاد پرست ذہنیت کے افراد کو پاکستان یا بنگلہ دیش چلے جانا چاہئیے ۔ ہندوستان میں ایسے مسلمانوں کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے ۔ رضوی نے کہا کہ ’’جو مسجد کے نام پر جہاد پھیلانا چاہتے ہیں انہیں چلے جاناچاہئیے ۔
اور آئی ایس آئی ایس کے سربراہ ابوبکر البغدادی کے فورسیس میں شامل ہوجانا چاہئیے ‘‘ ۔ انہوں نے الزام عائدکیا کہ بنیاد پرست مسلم علماء ملک کو تباہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں اور انہیں پاکستان یا افغانستان چلے جاناچاہئیے ۔ شیعہ علماء نے رضوی کے ریمارکس پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ماحول کو فرقہ وارانہ بنانے پر انہیں (رضوی کو) گرفتار کیا جانا چاہئیے ۔ شیعہ علما کونسل کے صدر مولانا افتخار حسین انقلابی نے الزام عائد کیا کہ رضوی وقف اراضیات پر ناجائز قبضوں اور فروخت میں ملوث مجرم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ’’ان (رضوی) کے خلاف چارج شیٹ پیش کی گئی تھی اور خود کو قانون سے بچانے کے لئے ڈرامے کررہے ہیں ‘‘ ۔ انقلابی نے کہا کہ ’’یو پی میں ایس پی دور حکومت میں انہیں(رضوی کو) ملائم سنگھ یادو اور اس وقت کے وزیر ، اعظم خاں کی سرپرستی حاصل تھی اور اب بی جے پی حکومت میں وہ بچنا چاہتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT