Thursday , January 18 2018
Home / ہندوستان / رام مندر کے مردہ مسئلہ کو زندہ کرنے اور نفرت پھیلانے کی سازش

رام مندر کے مردہ مسئلہ کو زندہ کرنے اور نفرت پھیلانے کی سازش

لکھنؤ /14 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ملک کے فرقہ وارانہ ماحول کو کشیدہ بنانے کے لئے بی جے پی نفرت انگیز مہم کا سہارا لے رہی ہے۔ رام مندر کا مسئلہ مردہ ہو چکا ہے، اس مردہ مسئلہ کو زندہ رکھنے کی کوشش فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرتا ہے۔ اتر پردیش کے وزیر پارلیمانی امور اعظم خاں نے کہا کہ ایودھیا میں پہلے ہی سے مندر ہے اور یہاں 22 ستمبر 1949 ئو کو ہی من

لکھنؤ /14 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ملک کے فرقہ وارانہ ماحول کو کشیدہ بنانے کے لئے بی جے پی نفرت انگیز مہم کا سہارا لے رہی ہے۔ رام مندر کا مسئلہ مردہ ہو چکا ہے، اس مردہ مسئلہ کو زندہ رکھنے کی کوشش فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرتا ہے۔ اتر پردیش کے وزیر پارلیمانی امور اعظم خاں نے کہا کہ ایودھیا میں پہلے ہی سے مندر ہے اور یہاں 22 ستمبر 1949 ئو کو ہی مندر بنایا گیا تھا، اب بابری مسجد کی شہادت کے بعد 6 دسمبر 1992ء سے وہاں باقاعدہ مندر ہے تو بی جے پی اس رام مندر کی تعمیر کا شور مچاکر فرقہ وارانہ کشیدگی کو ہوا دینا چاہتی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی پانچ سال کے اندر مندر مسئلہ کے پرامن حل کے لئے ایک منصوبہ بنا رہے ہیں، اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ معاشرہ کے پرامن ماحول کو بگاڑتے ہوئے نفرت پھیلانا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT