Sunday , November 19 2017
Home / سیاسیات / رام نائیک کی حرکتوں سے گورنر کے عہدہ کی توہین

رام نائیک کی حرکتوں سے گورنر کے عہدہ کی توہین

سماج وادی پارٹی لیڈر ابو عاصم اعظمی کا الزام
ممبئی ۔25 اگست (سیاست ڈاٹ کام ) مہاراشٹر میں اتر پردیش حکومت کے خلاف بیان بازی کرکے اتر بھارتیوں کو ورغلانے کی مذموم کوشش کرنے والے اتر پردیش کے گورنر رام نائک اپنے دستوری منصب کی توہین کررہے ہیں اتنا ہی نہیں گورنر کے اس جلیل القدر عہدہ پر رہ کر اپنی ہی حکومت کے خلاف بیان بازی کرنا قانون کے بھی عین منافی ہے گورنر رام نائک بی جے پی کے بھلے ہی رکن اور ہمدرد ہیں لیکن انہیں اس بات کا بھی خاص خیال رکھنا چاہئے کہ وہ اتر پردیش کے گورنر کے عہدہ پر فائز رہ کر اس قسم کی اوچھی حرکت نہیں کرسکتے ہیں اس سے گورنر کا وقار بھی مجروح ہوگا اس قسم کے سخت رد عمل کا اظہار یہاں سماج وادی پارٹی ممبئی و مہاراشٹر کے صدر ورکن اسمبلی ابوعاصم اعظمی نے ممبئی میں گورنر رام نائک کی تقریر کے بعد کیا ۔ ابوعاصم اعظمی نے کہاکہ انتہائی افسوس کا مقام ہے کہ ایک گورنر اپنے ہی صوبہ کی برائیاں ممبئی میںآکر کریں جہاں سے وہ بزات خود گورنر کے منصب پر فائز ہے اگر گورنر صاحب کو یاد ہوگا کہ اسمبلی میں کاروائیوں سے قبل گورنر کو ہی اپنی حکومت کی کارگزار یاں پیش کرنا ہوتی ہے کیا وہ یہ بھی بھول گئے کہ اس جلیل القدر عہدہ کا کسی پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ہوتا بلکہ یہ ایک دستوری منصب ہے ۔رام نائک پر تبصرہ کرتے ہوئے ابوعاصم اعظمی نے کہا کہ جو شخص دو پارلیمانی الیکشن میں اپنے حلقہ انتخاب سے فتح حاصل نہیں کرسکتا وہ بھلا اتر پردیش حکومت پر تنقید کا حق کیسے رکھ سکتا ہے ؟ایک نوجوان اداکار نے رام نائک کو پہلی مرتبہ ان کے ہی حلقہ انتخاب سے شکت دی اب عالم یہ ہے کہ وہ گورنر بننے کے بعد یہ بھی بھول گئے ہیں کہ ان کے لئے یہ دستوری عہدہ کیا معنی رکھتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT