Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / راوت نئے فوجی سربراہ،دو سینئیر عہدیدار نظر انداز ، دھنوا فضائیہ کے سربراہ

راوت نئے فوجی سربراہ،دو سینئیر عہدیدار نظر انداز ، دھنوا فضائیہ کے سربراہ

نئی دہلی ۔ 17 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : حکومت نے آج دو سینئیر عہدیدار کو نظر انداز کرتے ہوئے آرمی اسٹاف کے نائب سربراہ لیفٹننٹ جنرل بپن راوت کو نیا فوجی سربراہ مقرر کیا ہے ۔ جب کہ وائس چیف آف ایر اسٹاف ایر مارشل بی ایس دھنوا کو ہندوستانی فضائیہ کا نیا سربراہ مقرر کیا ہے ۔ وزارت دفاع نے ٹوئٹ کیا کہ 31 دسمبر کی دوپہر سے اس فیصلہ پر عمل ہوگا ۔ بپن راوت موجودہ فوجی سربراہ جنرل دلبیر سنگھ اور دھنوا آئی اے ایف کے موجودہ سربراہ اروپ راہا کی جگہ لیں گے ۔ لیفٹننٹ جنرل راوت نے سینئیر ترین فوجی کمانڈر لیفٹننٹ جنرل پراوین بخشی جو ایسٹرن کمانڈ کی قیادت کررہے ہیں اور سدرن کمانڈ کے سربراہ پی ایم ہاریز سے سبقت لے گئے ۔ آئندہ فوجی سربراہ کے لیے لیفٹننٹ جنرل پراوین بخشی کا نام لیا جارہا تھا ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ لیفٹننٹ جنرل راوت ابھرتے چیلنجس بشمول شمال میں از سر نو منظم کردہ فوجی طاقت ، مسلسل جاری دہشت گردی اور مغربی علاقہ میں بالواسطہ جنگ کے علاوہ شمال ۔ مشرق میں صورتحال سے نمٹنے کے لیے موزوں ترین پائے گئے ۔ انہیں گزشتہ تین دہوں میں مختلف سطحوں پر خدمات انجام دینے کا تجربہ ہے ۔ سینئیر رینک کے عہدیداروں کو نظر انداز کرنا کوئی نئی روایت نہیں لیکن حالیہ عرصہ کے دوران ایسا دیکھنے میں نہیں آیا ۔ اس سے پہلے 1983 میں اس وقت کی وزیراعظم اندرا گاندھی نے لیفٹننٹ جنرل ایس کے سنہا کو نظر انداز کر کے لیفٹننٹ جنرل اے ایس ویدیا کو فوجی سربراہ مقرر کیا تھا اور جنرل سنہا نے بطور احتجاج استعفیٰ دے دیا تھا ۔۔

TOPPOPULARRECENT