Tuesday , September 18 2018
Home / شہر کی خبریں / راہول نے بی جے پی قلعے میں دراڑ ڈال دی

راہول نے بی جے پی قلعے میں دراڑ ڈال دی

کانگریس کی اخلاقی کامیابی ۔5.5لاکھ’ نوٹا ‘ ووٹ کے بعد بی جے پی عوام میں مقبول نہ رہی : محمد علی شبیر
حیدرآباد ۔18 ڈسمبر ( سیاست نیوز) قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے گجرات میں کانگریس کی اخلاقی کامیابی ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ 5.5لاکھ نوٹا (Nota) ووٹ سے بی جے پی کا فریب آشکارہوگیا ۔ گجرات سے نریندر مودی کے زوال کا آغاز ہوگیا ہے ۔ محمد علی شبیر نے گجرات
کے نتائج پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ترقی سے متعلق وزیراعظم کے دعوے کو گجرات کے عوام نے مسترد کردیا ۔ نریندر مودی اور امیت شاہ کا جادو ختم ہوگیا ہے ‘ بی جے پی کے مضبوط قلعے میں راہول گاندھی نے دراڑ پیدا کرتے ہوئے ملک کے عوام اور سیکولر طاقتوں میں امید کی نئی کرن پیدا کی ہے ۔ ملک کے کسی بھی وزیراعظم نے کسی بھی ریاست میں اتنی انتخابی مہم نہیں چلائی جتنی مودی نے گجرات میں چلائی ہے ۔ باوجود اس کے بی جے پی اپنے مشن 150 کو حاصل کرنے میں ناکام ہوگئی ‘ یہاں تک بی جے پی نے 2012ء میں جو مظاہرہ کیا تھا اس کو دہرانے میں بھی کامیاب نہیں ہوئی جبکہ وزیراعظم نریندرمودی نے گجرات میں 37 تا 39 جلسوں سے خطاب کیا ۔ امیت شاہ بوتھسطح پر بی جے پی کارکنوں کے اجلاسوں کا انعقاد کیا ۔ ریاست کی ساری سرکاری مشنری انتخابات پر جھونک دی گئی ۔ مرکزی وزراء ‘ بی جے پی کے چیف منسٹرس ‘ بی جے پی کے ارکان پارلیمنٹ کو گجرات کے گلی گلی میں پھیلا دیا گیا ۔ آر ایس ایس و ہندو توا کا نیٹ ورک سرگرم ہوگیا ۔ رائے دہی سے عین قبل گجرات کے انتخابات میں پاکستان کی مداخلت اور کانگریس پر وزیراعظم کا قتل کرنے کیلئے پاکستان کو ’’ سپاری ‘‘ دینے کا الزام عائدکیا گیا۔ نفرت پھلائی گئی ‘ جھوٹ کا سہارا لینے کے بعد بھی بی جے پی 100کا ہندسہ پانے میں کامیاب نہیں ہوئی ۔ تنہا انتخابی مہم چلانے والے راہول گاندھی کیلئے کانگریس کی کامیابی تاریخی کامیابی ہے ۔ اس سے راہول گاندھی کا وقار بلند ہوا ہے ۔ تمام سیاسی حربے اختیار کرنے اور 22سال تک حکمرانی والی بی جے پی اپنی زمین پر مضبوط طریقہ سے ٹک نہیں پائی ۔ تکنیکی طور پر سادہ اکثریت سے بی جے پی کامیاب ہوئی ہے ‘ مگر اخلاقی طور پر کامیابی کانگریس کے حصے میں آئی ہے ۔ محمد علی شبیر نے 5,51.615 لاکھ رائے دہندوں کی جاب سے نوٹا ( کوئی امیدوار پسند نہیں ) کے حق میں ووٹ دینے پر بھی حیرت کا اظہار کرتے ہوئے الکٹرانک ووٹنگ مشین میں چھیڑ چھاڑ ہونے کے شکوک کا دعویٰکیا ۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل نے سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ اور سینئر قائد منی شنکر ایئر کو پاکستان سے جوڑتے ہوئے عوام کو گمراہ کرنے کی بھی مذمت کی ۔

TOPPOPULARRECENT