Wednesday , January 17 2018
Home / Top Stories / راہول کی تفصیلات معلوم کرنا معمول کی کارروائی

راہول کی تفصیلات معلوم کرنا معمول کی کارروائی

نئی دہلی 16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام )دہلی پولیس کی جانب سے نائب صدر کانگریس راہول گاندھی کی ’جاسوسی‘‘ کے الزامات سے مسلسل انکار کیا جارہا ہے۔ پولیس کا یہ موقف ہے کہ ظاہری دکھاوے کے بارے میں تفصیلات معلوم کرنا قدیم اور معمول کا طریقہ کار ہے ۔ چند سابق دہلی پولیس سربراہان نے شبہات کا اظہار کیا اور میڈیا میں ان کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ وہ ا

نئی دہلی 16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام )دہلی پولیس کی جانب سے نائب صدر کانگریس راہول گاندھی کی ’جاسوسی‘‘ کے الزامات سے مسلسل انکار کیا جارہا ہے۔ پولیس کا یہ موقف ہے کہ ظاہری دکھاوے کے بارے میں تفصیلات معلوم کرنا قدیم اور معمول کا طریقہ کار ہے ۔ چند سابق دہلی پولیس سربراہان نے شبہات کا اظہار کیا اور میڈیا میں ان کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ وہ اس طرح کے عمل سے واقف نہیں ہیں۔ کمشنر پولیس بی ایس بسی نے کہا کہ ایک بڑی تنظیم ہونے کی بناء یہ ضروری نہیں کہ ہر بات کو پولیس سربراہ کے علم میں لایا جائے ۔ دہلی پولیس ایک بڑی تنظیم ہے یہاں بہت زیادہ سرگرمیاں انجام دی جاتی ہیں اور بعض معمول کی سرگرمیاں بھی ہیں جو سربراہان کے علم میں لائی یا نہیں بھی لائی جاسکتی ہیں ۔ اس معاملہ میں ایک طریقہ کار اختیار کیاگیا ہے اور اس پر عمل ہورہا ہے ۔ انہو ںنے کہا کہ جب یہ معاملہ تنازعہ کی شکل اختیار کر گیا تب انہیں یہ بات بتائی گئی ۔ وہ اپنے پیشرو کو ناواقفیت کی بنا مورد الزام ٹھہرا نہیں چاہتے اور نہ انہیں اس بات پر کوئی حیرت ہیکہ بنیادی و معمول کی سرگرمیوں سے وہ بے خبر تھے ۔ انہو ںنے کہا کہ اس معاملہ کو زیادہ طوالت نہیں دی جانی چاہئے کوئی شخص جو تنظیم کا سربراہ ہو اسے عموماً بڑے مسائل یا کرائمس منیجمنٹ پر وجہ دینی ہوتی ہے ۔ اس طرح کی تفصیلات حاصل کرنے کے کوئی ناپاک عزائم نہیں ہیں ۔ پولیس کے مطابق وسطی دہلی میں رہنے و الے ارکان پارلیمنٹ کا سروے مقررہ نمونہ درخواست کے مطابق کیا جاتا ہے اور یہ روایت 1960 سے چلی آرہی ہے ۔ مختلف مواقع پر اس پر نظر ثانی کی جاتی ہے اس پر 1957 ‘1987 اور پھر 1999 میں نظر ثانی کی گئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT