Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / راہول گاندھی عنقریب کانگریس کے صدر منتخب ہوں گے

راہول گاندھی عنقریب کانگریس کے صدر منتخب ہوں گے

حیدرآباد /20 مئی (سیاست نیوز) سابق مرکزی وزیر جے رام رمیش نے کہا کہ راہول گاندھی بہت جلد کانگریس کے صدر منتخب ہوں گے۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ راہول گاندھی کانگریس کی باگ ڈور سنبھالنے کے اہل ہیں، دو ماہ کی چھٹی کے بعد ان میں بہت بڑی تبدیلی محسوس کی جا رہی ہے۔ پارلیمنٹ میں کسانوں کے مسائل پر جدوج

حیدرآباد /20 مئی (سیاست نیوز) سابق مرکزی وزیر جے رام رمیش نے کہا کہ راہول گاندھی بہت جلد کانگریس کے صدر منتخب ہوں گے۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ راہول گاندھی کانگریس کی باگ ڈور سنبھالنے کے اہل ہیں، دو ماہ کی چھٹی کے بعد ان میں بہت بڑی تبدیلی محسوس کی جا رہی ہے۔ پارلیمنٹ میں کسانوں کے مسائل پر جدوجہد اور ملک کی مختلف ریاستوں میں کسان بھروسہ یاترا منظم کرنے سے کسانوں میں امید پیدا ہوئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس پر عوام کا اعتماد بحال ہو رہا ہے، جب کہ کانگریس ایک قومی جماعت ہے اور راہول گاندھی ملک کی تمام ریاستوں میں کانگریس کو مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔ وہ نامزد عہدوں کے ذریعہ ایوانوں تک پہنچنے کی بجائے منتخب ہوکر ایوانوں تک پہنچنے پر زیادہ توجہ دے رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی نوجوانوں کی خدمات سے استفادہ کے لئے نئے رہنمایانہ خطوط اپنا رہی ہے، تاہم اس کا یہ مطلب نہیں کہ پارٹی میں سینئر قائدین کو نظرانداز کردیا جائے گا، بلکہ سینئر قائدین کے تجربات اور نوجوان قائدین کے جوش و جذبہ کو طاقت کے طورپر استعمال کیا جائے گا، لیکن جب تک پارٹی تنظیمی سطح پر مستحکم نہیں ہوتی، آگے بڑھنا مشکل ہے۔ انھوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کا حصول اراضیات بل کانگریس کے لئے سنجیونی بن گیا ہے۔ ملک کے عوام کو ایک سال میں یہ اندازہ ہو گیا کہ بی جے پی زیر قیادت این ڈی اے حکومت کارپوریٹ سیکٹر کی حامی ہے، کیونکہ کسانوں کے مفادات کو نقصان پہنچاکر بی جے پی کی کامیابی میں نمایاں رول ادا کرنے والی کمپنیوں کو انعام و اکرام سے نوازا جا رہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے ایک سال کے دوران اپنا زیادہ تر وقت بیرونی ممالک کے دوروں پر صرف کیا، جب کہ ملک کی ترقی، غریب عوام کی فلاح و بہبود اور انتخابی منشور میں کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے میں بی جے پی زیر قیادت این ڈی اے حکومت پوری طرح ناکام ہوگئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم بیرونی ممالک میں سیاسی مفاد کے لئے اپوزیشن جماعتوں کو تنقید کا نشانہ بناکر ہندوستان کی توہین کر رہے ہیں۔ مسٹر جے رام رمیش نے کہا کہ کانگریس کے لئے جیت اور ہار کوئی معنی نہیں رکھتی، کانگریس پارٹی ایک بار پھر بڑی تیزی کے ساتھ عروج پر پہنچے گی۔

انھوں نے وزیر اعظم مودی پر آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا موقف نہ دینے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ بل کی پارلیمنٹ اور راجیہ سبھا میں پیشکشی کے موقع پر وینکیا نائیڈو نے آندھرا پردیش کو پانچ سال کی بجائے دس سال تک خصوصی ریاست کا موقف دینے کا مطالبہ کیا تھا، لیکن اب این ڈی اے حکومت میں آندھرا پردیش کے ساتھ ناانصافی ہو رہی ہے، جب کہ وینکیا نائیڈو مرکزی وزیر ہونے کے باوجود تماشہ دیکھ رہے ہیں۔ انھوں نے چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو پر مرکز پر دباؤ ڈالنے اور عوام سے کئے گئے وعدوں کو پورا کرنے میں ناکامی کا الزام عائد کیا۔ تلنگانہ کے کانگریس رکن پارلیمنٹ جی سکھیندر ریڈی کی جانب سے وزیر اعظم کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ نہ دینے کے مطالبہ کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ جی سکھیندر ریڈی کی شخصی رائے ہے، جب کہ کانگریس پارٹی آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے کے فیصلہ پر اٹل ہے۔ انھوں نے کہا کہ کانگریس قائدین کو پارٹی کے فیصلوں کا احترام کرنا چاہئے۔ جہاں تک سکھیندر ریڈی کے خلاف کارروائی کا معاملہ ہے تو ہائی کمان اس کا جائزہ لے گی۔

TOPPOPULARRECENT