Monday , November 19 2018
Home / سیاسیات / راہول گاندھی کا برت مضحکہ خیز

راہول گاندھی کا برت مضحکہ خیز

سجن کمار اور جگدیش ٹائیٹلر کو ہٹادینا کانگریس کااعتراف جرم :بی جے پی
نئی دہلی ۔9 اپریل ۔(سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے راج گھاٹ پر کانگریس کے صدر راہول گاندھی کے برت کا مذاق اُڑاتے ہوئے اس کو ایک دھوکہ قرار دیا اور کہاکہ 1984 ء کے مخالف سکھ فسادات کے ملزمین سجن کمار اور جگدیش ٹائیٹلر کو اصل شہ نشین سے دور رکھنا دراصل کانگریس کے اعتراف جرم کے مترادف ہے ۔ بی جے پی کے ترجمان سمبیت بترا نے مبینہ فرقہ پرستی اور ذات پات کے نام پر تشدد کے خلاف اپوزیشن پارٹی کے ملک گیر برت کو مضحکہ خیز قرار دیا اور کہاکہ اس (کانگریس ) کے قائدین عدم تشدد کے بارے میں بات کرنے کیلئے مہاتما گاندھی کی یادگار پر پہونچے ہیں لیکن سجن کمار اور جگدیش ٹائیٹلر کی موجودگی نے اس پارٹی کاحقیقی پرتشدد چہرہ بے نقاب کردیا ہے ۔ سمبیت بترا نے کہاکہ ’’کانگریس خود اپنے جال میں پھنس گئی ہے ۔ راہول کی طرف سے آج جو ہم نے دیکھا ہے وہ برت نہیں بلکہ برت کاڈھونگ تھا ۔ یہ دراصل ان ( راہول ) کی سیاست کو آگے بڑھانے کی ایک کوشش تھی حالاکہ عوام ان کو باربار مسترد کرچکے ہیں‘‘۔ انھوں نے کہاکہ کانگریس کے دو سینئر قائدین کو واپس ہونے کیلئے کہا جانا دراصل اس پارٹی کا اعتراف جرم ہے ۔ بترا نے کہا کہ کانگریس کے اقتدار کے دوران راپور ، گویانا اور جھجر میں دلتوں کے خلاف تشدد پر راہول گاندھی نے آیا ایک وقت کا کھانا بھی ترک کیا تھا ۔ کانگریس زیراقتدار کرناٹک میں گزشتہ پانچ سال کے دوران دلت طبقہ کے خلاف جرائم کے 9,080 واقعات پیش آئے جن میں 358 دلت ہلاک ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT