Saturday , January 20 2018
Home / ہندوستان / راہول گاندھی کی جاسوسی کی تردید: ارون جیٹلی

راہول گاندھی کی جاسوسی کی تردید: ارون جیٹلی

نئی دہلی۔16مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) حکومت نے آج کانگریس کے ان الزامات کی تردید کردی کہ راہول گاندھی کی جاسوسی کی جارہی ہے ۔ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کہا کہ صرف شخصی کوائف شفاف انداز میں حاصل کئے جارہے ہیں اور قبل ازیں 526 اہم شخصیات بشمول صدر کانگریس سونیا گاندھی اور سابق وزرائے اعظم کے بارے میں بھی ایسی کارروائی ہوچکی ہے ۔ اپوزیش

نئی دہلی۔16مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) حکومت نے آج کانگریس کے ان الزامات کی تردید کردی کہ راہول گاندھی کی جاسوسی کی جارہی ہے ۔ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کہا کہ صرف شخصی کوائف شفاف انداز میں حاصل کئے جارہے ہیں اور قبل ازیں 526 اہم شخصیات بشمول صدر کانگریس سونیا گاندھی اور سابق وزرائے اعظم کے بارے میں بھی ایسی کارروائی ہوچکی ہے ۔ اپوزیشن رائی کا پربت بنارہی ہے جب کہ رائی بھی موجود نہیں ہے ۔ جاسوسی کے الزامات پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے قائد ایوان ارون جیٹلی نے کہا کہ پولیس 1987ء سے ایسی تفصیلات حاصل کررہی ہے ۔ یہ وہی پروفارما ہے جس پر 1999ء میں نظرثانی کی گئی تھی ۔ سابق وزرائے اعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا ‘ آئی کے گجرال ‘ منموہن سنگھ اور اٹل بہاری واجپائی کے شخصی کوائف حاصل کئے گئے تھے ۔ سونیا گاندھی کے شخصی کوائف 2004ء ‘ 2009ء ‘ 2010 ‘ 2011اور 2012حاصل کئے گئے تھے ۔ صدر جمہوریہ ہند بننے سے پہلے پرنب مکرجی کے بارے میں بھی ایسی تفصیلات 2001‘ 2007ء ‘ 2008ء ‘ 2009 اور 2012ء میں حاصل کی گئی تھیں ۔ بی جے پی کے سینئر قائدین ایل کے اڈوانی اور سشما سوراج ‘ کانگریس کے احمد پٹیل ‘ سی پی آئی ایم کے سیتا رام یچوری اور جے ڈی یو کے شرد یادو کے بارے میں بھی ایسی معلومات حاصل کی گئی تھیں۔ موجودہ فارم ہی میں 526 افراد کے شخصی کوائف حاصل کئے گئے تھے ۔ یہ ایک شفاف اور صیانتی بنیادوں پر کی ہوئی کارروائی ہے جاسوسی نہیں ۔ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کہا کہ یہ کارروائی صرف گذشتہ 8ماہ میں نہیں کی گئی ۔ انہوں نے تجویز پیش کی گئی قائد اپوزیشن غلام نبی آزاد کو ان کے ساتھ بیٹھ کر اس مسئلہ پر تبادلہ کرنا چاہیئے ۔ سابق وزیراعظم راجیو گاندھی کی شناخت ان کے قتل کے بعد ان کے جوتوں کے ذریعہ ہی ممکن ہوسکی تھی ۔ صیانتی تفصیلات حاصل کرنے کی کارروائی صیانتی ماہرین پر چھوڑ دینی چاہیئے ہم کو صیانت کا ماہر بننے کی کوشش نہیں کرنی چاہیئے ۔ ارون جیٹلی نے کہا کہ صیانتی وجوہات پر شخصی کوائف حاصل کرنے کی کارروائی کا آغاز کانگریس دور اقتدار میں 1987ء میں ہوا تھا ۔ دریں اثناء دہلی پولیس کمشنر بی ایس بسی نے وزیر مملکت برائے داخلہ کرن رجیجو سے آج ملاقات کر کے انہیں راہول گاندھی کی مبینہ جاسوسی کے تنازعہ کے سلسلہ میں بات چیت کی اور انہیں تفصیلات سے واقف کروایا ۔ توقع ہے کہ کرن رجیجو لوک سبھا میں کل اس سلسلہ میں بیان دیں گے ‘ کیونکہ مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ جاپان کے دورہ پر ہیں ۔ سرکاری درائع کے بموجب رجیجو نے بسی کی فراہم کردہ تفصیلات کی بنیاد پر ایک نوٹ کرلیا ہے اور توقع ہے کہ وہ کل پارلیمنٹ میں اس مسئلہ پر بیان دیں گے ۔ کانگریس اس مسئلہ پر وقفہ صفر کے دوران لوک سبھا میں یہ مسئلہ اٹھانا چاہتی ہے اور دہلی پولیس کے اقدام کے خلاف احتجاج کرنا چاہتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT