Sunday , November 19 2017
Home / سیاسیات / راہول گاندھی کے ’’خاندان ‘‘ کے تبصرہ پر بی جے پی اور کانگریس کی زبانی تکرار

راہول گاندھی کے ’’خاندان ‘‘ کے تبصرہ پر بی جے پی اور کانگریس کی زبانی تکرار

وزیراعظم مودی بیرون ملک ہندوستان کی توہین کرنے والے اولین شخص :آنند شرما
نئی دہلی۔ 12 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی اور کانگریس آج تلخ زبانی تکرار میں ملوث ہوگئے جبکہ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے ’’خاندانی سیاست‘‘ کا دفاع کیا جبکہ برسراقتدار پارٹی اسے ’’ایک ناکام خاندانی سیاست‘‘ قرار دے رہی ہے۔ بی جے پی نے راہول گاندھی کی غیرملکی سرزمین پر مودی حکومت پر تنقید پر اعتراض کیا جبکہ کانگریس نے فوری جوابی وار کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی کو ہندوستان کی غیرملکی سرزمین پر پہلی توہین کرنے کا مجرم قرار دیا۔ کیلی فورنیا یونیورسٹی برکلے میں طلبہ کے ساتھ تبادلہ خیال کے دوران راہول گاندھی نے کہا کہ ہندوستان، خاندانی سیاست کے تحت چلایا جارہا ہے۔ انہوں نے سماج وادی پارٹی، ڈی ایم کے، یہاں تک کہ بالی ووڈ کے حوالے دیئے تھے۔ چند ہی گھنٹوں کے دوران مرکزی وزیر اطلاعات و نشریات سمرتی ایرانی نے راہول گاندھی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایک ’’ناکام خاندان کے فرد‘‘ ہیں جنہوں نے غیرملکی سرزمین پر ہندوستان کو بدنام کیا ہے۔ کانگریس نے پرزور انداز میں جوابی وار سمرتی ایرانی پر کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ وزیراعظم نے سب سے پہلے غیرملکی سرزمین پر ہندوستان کی توہین کی تھی۔ یہ الزام غلط ہے کہ راہول گاندھی نے ہندوستان کی اہمیت گھٹا دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی تنقید بی جے پی کی عدم رواداری پر تھی اور موجودہ حکومت پر کی گئی تھی۔پارٹی کے ترجمان آنند شرما نے کہا کہ وزیراعظم نے اپنے اولین غیرملکی دورہ کے موقع پر ہندوستان کو کرپٹ قرار دیا تھا اور کہا تھا کہ پوری دنیا ہندوستان کو ’’ہاتھ میں بھیک کا کٹورہ لئے ہوئے ملک‘‘ کی حیثیت سے جانتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم پر تنقید کرتے ہوئے وزیراعظم نے ملک پر تنقید کردی۔ ان کی اور ان کے وزراء کی حب الوطنی اس تبصرہ سے جھلکتی ہے، انہیں ملک سے معذرت خواہی کرنی چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT