Wednesday , August 22 2018
Home / مذہبی صفحہ / رب جو چاہتا ہے وہی ہوتا ہے

رب جو چاہتا ہے وہی ہوتا ہے

مرسل : ابوزہیر نظامی

اس دنیا میں اللہ تعالی کے منشاء ومرضی ہی سے سارے کام انجام پاتے ہیںوہ جوچاہتا ہے وہی ہوتا ہے وہ جس کیلئے چاہتا ہے ان بچوں کے سرو ں پر ماں باپ کا سایہ سلامت رکھتا ہے اور جن سے چاہتا ہے اٹھالیتا ہے اس کی حکمت میں کسی کا کوئی دخل نہیں ، ایسے نابالغ بچے یتیم کہلاتے ہیں ۔ یتامی کے سلسلہ میں کئی ایک آیاتِ قرآنیہ میں ان کی رعایت رکھنے اور ان کے ساتھ حسن سلوک کرنے کی ترغیب وتحریص کے ساتھ ان کے اموال میں دست برد کرنے اور خیانت کرکے ان کے حقوق کو پامال کرنے والوں کیلئے سخت وعید سنائی گئی ہے۔
احادیث پاک میں بھی ان کے سلسلہ میں کافی ہدایات ارشاد فرمائی گئی ہیں۔ ایک روایت پاک میں ارشاد ہے کہ وہ عورت جو شوہر کے فوت ہوجانے کے بعد صرف اس کے یتیم بچوں کی وجہ سے اس نے اپنے آپ کو نکاح سے روکے رکھا ہو اور بچوں کی خدمت وپرورش میں اس کے رخسار سیاہ ہوگئے ہوں تو میں اور وہ عورت قیامت کے دن ایسے قریب ہوں گے جیسے درمیانی انگلی اور شہادت کی انگلی ایک دوسرے کے قریب ہیں۔(ابودائود)
ایک اور روایت میں ہے۔ یتیم کی پرورش کرنے والا خواہ اس کے عزیز واقاریب سے ہو یا کوئی اور ہو میں اور وہ جنت میں اس طرح ہوں گے۔ راوی حدیث نے درمیانی انگلی اور شہادت کی ملاکر اشارہ کیا۔(مسلم)
اور ایک روایت میں ہے ۔ جو کوئی یتیم کے سر پر شفقت بھرا ہاتھ پھیرے تو اللہ سبحانہ وتعالی ہر اس بال کے عوض جس پر اس نے ہاتھ پھیرا ہے اس کے نامہ اعمال میں نیکیاں لکھ دیتے ہیں ۔
ایک اور حدیث پاک میں ہے کہ مسلمانوں کے جس گھر میں یتیم ہو اور اس کے ساتھ حسن سلوک کیا جاتا ہو تو وہ سارے گھرانوں میں بہتر گھرانہ ہے ۔
اور جس گھر میں یتیم ہو اور اس کے ساتھ برا سلوک کیا جاتا ہو تو وہ مسلمانوں کا بدترین گھر ہے ۔ یتامی کے اموال کی حفاظت کرنے اور اس میں کسی طرح کی خیانت سے بچنے کی خصوصی ہدایت کتاب وسنت میں وضاحت کے ساتھ دی گئی ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT