Wednesday , January 17 2018
Home / مذہبی صفحہ / رسول اللہﷺ کی مرغوبات

رسول اللہﷺ کی مرغوبات

حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے مرغ، سرخاب، بکری، اونٹ اور گائے کا گوشت بھی تناول فرمایا۔ ثرید یعنی شوربے میں توڑی ہوئی روٹی کو پسند فرماتے تھے۔ حلیم بھی پسند فرماتے تھے۔ آپﷺ فلفل اور مصالحہ جات بھی تناول فرماتے تھے۔ سالکن میں کدو آپﷺ تلاش فرمایا کرتے تھے۔ آپﷺ نے خرمائے نیم پختہ، تازہ اور خرمائے خشک، چقندر، کھجور اور اور گھی نیز پنیر کا مالیدہ بھی تناول فرمایا ہے۔
حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا سے مروی ہے کہ آپﷺ تربوز، ککڑی، خرمے کے ساتھ تناول فرماتے اور فرماتے کہ اس کی گرمی کا اس کی سردی سے تدارک ہو جاتا ہے۔ آپﷺ خرما تر کرکے اس کا زلال، دودھ اور پانی سب ایک ہی پیالے میں نوش فرماتے۔ دودھ آپﷺ کو بہت مرغوب تھا۔ آپﷺ نے فرمایا کہ ’’دودھ کے سوا کوئی چیز نہیں جو کھانے اور پینے دونوں کا کام دے سکے‘‘۔ آپﷺ کبھی خالص دودھ نوش فرماتے اور کبھی سرد پانی ملاکر یعنی لسی۔ نئے پھلوں کو آپﷺ رغبت کے ساتھ تناول فرماتے۔ پھلوں اور ترکاریوں کا استعمال ان کی مصلح چیزوں کے ساتھ کیا کرتے تھے۔ مسکہ اور پنیر بھی تناول فرمانے کا ذکر احادیث میں ہے۔ (زاد المعاد)
جب آپﷺ کی خدمت اقدس میں کوئی نیا پھل پیش کیا جاتا تو آپ اس کو آنکھوں اور ہونٹوں پر رکھتے اور پھر آپﷺ کی خدمت میں جو سب سے کم عمر بچہ ہوتا، آپ اس کو عنایت فرماتے۔ (زاد المعاد)
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو سرد اور شیریں پانی زیادہ مرغوب تھا۔ آپﷺ نے شہد میں پانی ملاکر نوش فرمایا ہے اور تھوڑے توقف کے بعد جو کچھ موجود ہوتا آپﷺ تناول فرماتے۔ (مدارج النبوۃ)
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اپنے اصحاب کو کوئی چیز پلاتے تو خود سب سے آخر میں نوش فرماتے۔ پانی پینے کے متعلق آپﷺ کی یہ ہدایت ہے کہ پانی چوس چوس کر پیو، غٹاغٹ نہ پیو۔ حضرت انس رضی اللہ تعالی عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پانی پینے میں تین مرتبہ سانس لیا کرتے اور فرماتے کہ ’’اس طرح پینا زیادہ خوشگوار، خوب سیر کرنے والا اور ذریعہ شفا ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT