Monday , November 20 2017
Home / Top Stories / رشتوں کے انتخاب میں دینداری ‘ و کردار کو معیار بنانے کا مشورہ

رشتوں کے انتخاب میں دینداری ‘ و کردار کو معیار بنانے کا مشورہ

سیاست اور ایم ڈی ایف کے زیراہتمام دوبہ دو پروگرام ‘ عابد صدیقی و دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 8 ؍ اکٹوبر (دکن نیوز) ادارہ سیاست اور میناریٹیز ڈیولپمنٹ فورم کی جانب سے رائیل ریجنسی گارڈنس (آصف نگر) میں منعقدہ 78 واں دوبہ دو ملاقات پروگرام نہایت کامیابی کے ساتھ آج شام اختتام کو پہنچا جس میں سینکڑوں کی تعداد میں والدین اور سرپرستوں نے شرکت کی ۔ مسلم شادیوں کو طئے کرنے کے سلسلے میں رشتوں کے انتخاب کے لئے والدین نے باہمی مشاورت کے ذریعہ اپنی من پسند سے بے شمار رشتوں کا انتخاب کیا ۔ بارش کے باوجود بڑی تعداد میں تقریباً ہر کاؤنٹر پر والدین کا ہجوم رہا ۔ 10 بجے دن سے رجسٹریشن کا آغاز ہوا ۔ لڑکوں اور لڑکیوں کے پیامات کے رجسٹریشن کے علحدہ علحدہ کاؤنٹرس بنائے گئے تھے ۔ ایک دوسرے کی پہچان کے لئے لڑکی والوں کو گرین ربن اور لڑکے والوں کو زرد ربن فراہم کئے گئے ۔ دوبہ دو ملاقات پروگرام میں لڑکوں کے 45 اور لڑکیوں کے 90 رجسٹریشن کئے گئے ۔ اس کے علاوہ انجنیئرنگ ‘ میڈیسن ‘ پوسٹ گریجویٹ ‘ گریجویٹس ‘ انٹر ‘ ایس ایس سی ‘ حافظ ‘ عالم ‘ فاضل ‘ عقدثانی کے لئے کونسلنگ کے علحدہ علحدہ کاؤنٹرس بنائے گئے ۔ عقدثانی اور معذورین کے پیامات کے لئے الگ کاؤنٹر کا انتظام کیا گیا تھا ۔

قبل ازیں دو بہ دو پروگرام کے سلسلہ میں جلسہ منعقد ہوا جس کی صدارت جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے کی ۔ انہوں نے اپنی صدارتی تقریر میں والدین پر زور دیا کہ رشتوں کے انتخاب کے سلسلہ میں اپنی ذمہ داریوں کا خیال رکھیں ۔ رشتے طئے کرنے میں دینداری ‘ خاندانی شرافت اور سیرت و کردار کو معیار بنائیں ۔ انہوں نے کہا کہ ادارہ سیاست کی جانب سے جو تحریک چلائی جا رہی ہے اس کا بنیادی عقد مسلم معاشرہ سے جہیز ‘ لین دین او ر اسراف کا خاتمہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم شادیوں میں اخلاقی گراوٹ اور غیر اسلامی طرز عمل کے باعث طلاق و خلع کے واقعات میں روز افزوں اضافہ ہوتا جا رہاہے جو باعث شرم ہے ۔ انہوں نے والدین سے کہا کہ وہ شادیوں میں اپنے غیر ضروری خواہشات کی تکمیل کیلئے اپنے گھر اور قوم کی معیشت کو اس طرح برباد نہ کریں ۔ انہوں نے شادیوں میں آتش بازی ‘ گانا ’ بجانا اور آرکسٹرا اسی طرح کی دوسری لعنتوں کی مذمت کی اور کہا کہ ملک کے موجودہ حالات اس بات کے متقاضی ہیں کہ ہم معاشرے کو اسلامی اُصولوں اور تعلیمات سے آراستہ کریں ۔ مولانا حافظ صابر پاشاہ امام و خطیب مسجد حج ہاوز نے کہا کہ مسلم معاشرہ میں موجود بگاڑ کے ذمہ دار ہم خود ہیں ۔ ( باقی سلسلہ صفحہ 8 پر )

TOPPOPULARRECENT