Friday , January 19 2018
Home / جرائم و حادثات / رشتہ داروں کی ہراسانی کا شکار خواتین کی خودکشی

رشتہ داروں کی ہراسانی کا شکار خواتین کی خودکشی

حیدرآباد ۔ 12 جولائی (سیاست نیوز) بچوں کو اردو میڈیم ذریعہ تعلیم پر ناراض ایک اور سسرالی رشتہ داروں کی ہراسانی سے تنگ آ کر دو خواتین نے خودکشی کرلی۔ یہ دو علحدہ واقعات سنتوش نگر اور میڑچل پولیس حدود میں پیش آئے۔ سنتوش نگر پولیس کے مطابق 30 سالہ اے رحمان جو سنتوش نگر علاقہ کے ساکن رحمان کی بیوی تھی، اس خاتون کی خواہش اپنے بچوں کو انگلش م

حیدرآباد ۔ 12 جولائی (سیاست نیوز) بچوں کو اردو میڈیم ذریعہ تعلیم پر ناراض ایک اور سسرالی رشتہ داروں کی ہراسانی سے تنگ آ کر دو خواتین نے خودکشی کرلی۔ یہ دو علحدہ واقعات سنتوش نگر اور میڑچل پولیس حدود میں پیش آئے۔ سنتوش نگر پولیس کے مطابق 30 سالہ اے رحمان جو سنتوش نگر علاقہ کے ساکن رحمان کی بیوی تھی، اس خاتون کی خواہش اپنے بچوں کو انگلش میڈیم میں تعلیم دلانے کی تھی لیکن شوہر نے بچوں کو اردو میڈیم میں داخلہ دلایا تھا اور اس بات کو لیکر دونوں میاں بیوی میں جھگڑے چل رہے تھے۔ ان کی شادی 13 سال قبل ہوئی تھی اور ان کے 2 لڑکے اور 3 لڑکیاں ہیں، جس سے تنگ آکر رحمان نے 8 جولائی کے دن اپنے جسم پر کیروسین ڈال کر آگ لگا لی اور کل رات علاج کے دوران فوت ہوگئی۔ میڑچل پولیس کے مطابق 24 سالہ شبانہ بیگم جو چنگی چرلہ علاقہ کے ساکن محمد یوسف کی بیوی تھی، ان کی شادی ایک سال قبل ہوئی تھی اور شادی کے چند ماہ بعد سے شبانہ بیگم کو شوہر اور سسرالی رشتہ داروں کی جانب سے ہراسانی کا سامنا تھا، جس سے تنگ آ کر شبانہ نے 5 جولائی کو خودسوزی کرلی اور علاج کے دوران کل رات فوت ہوگئی۔ پولیس نے مقدمات درج کرلئے ہیں اور مصروف تحقیقات ہے۔

TOPPOPULARRECENT