Monday , June 18 2018
Home / شہر کی خبریں / رشوت ستانی کو ختم کرنے جامع قانون سازی پر زور

رشوت ستانی کو ختم کرنے جامع قانون سازی پر زور

مخالف رشوت ستانی جدوجہد کمیٹی کے قائدین کی پریس کانفرنس

مخالف رشوت ستانی جدوجہد کمیٹی کے قائدین کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 19 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : مخالف رشوت ستانی جدوجہد کمیٹی نے حکومت تلنگانہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ریاست تلنگانہ سے رشوت خوری کے مکمل صفائے کے لیے بجائے ٹول فری نمبر کے قانون ضمانت حق خدمات (Right to services Guarantee Act) قانون کا نفاذ عمل میں لائے تاکہ سرکاری کاموں میں عہدیداروں کی جانب سے کی جانے والی تساہلی کا خاتمہ اور رشوت طلب کرنے والے عہدیداروں کے خلاف سخت قانونی چارہ جوئی کو یقینی بنایا جاسکے بصورت دیگر ان کی مخالف رشوت خور جدوجہد کمیٹی کی جانب سے آئندہ ماہ 15 فروری سے غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال اور احتجاج منظم کرنے کا انتباہ دیا ۔ آج یہاں کنوینر ’ رشوت ستانی کمیٹی‘ و ٹریڈ یونین لیڈر مسٹر محمد امان اللہ خاں ، جوائنٹ سکریٹریز مسرز جے رویندر ، شیخ بدیع الزماں ، کے لکشمی نرسیا نے منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران کیا ۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست تلنگانہ سے رشوت خوری کے خاتمہ کے لیے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے آغاز کئے گئے ٹول فری کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ سے رشوت خوری کے خاتمہ کے لیے صرف ٹول فری نمبر ہی دے دینا کافی نہیں ہے بلکہ رشوت خوری کے خاتمہ کے لیے ایک جامع قانون مدون کرنے کی اشد ضرورت ہے ۔ اس موقع پر جدوجہد کمیٹی ارکان مسرز ایم اے سلیم ، محمد عتیق اور سید غوث عرف لکی بھی موجود تھے ۔ قبل ازیں مسٹر محمد امان اللہ خان نے مخالف رشوت خوری سے متعلق تحریر کردہ پوسٹرس کی رسم اجرائی انجام دی ۔۔

TOPPOPULARRECENT