Tuesday , January 23 2018
Home / جرائم و حادثات / رشوت کی رقم نگل جانے والے سابق سب انسپکٹر کو سزائے قید

رشوت کی رقم نگل جانے والے سابق سب انسپکٹر کو سزائے قید

حیدرآباد۔ 9 فروری (سیاست نیوز) اینٹی کرپشن بیورو عدالت نے ہمایوں نگر کے سابق سب انسپکٹر آر چندرا کرن ریڈی کو رشوت لینے کے الزام میں قصوروار پایا اور دو سال کی سزائے قید اور 10 ہزار روپئے جرمانہ عائد کیا۔اے سی بی کورٹ کے جج ہری کرشنا بھوپتی نے آج یہ فیصلہ سنایا۔ تفصیلات کے بموجب وسیم النساء نے اپنے شوہر سید نصیر حسن عرف زاہد کے خلاف ہمایوں نگر پولیس میں مزید جہیز کیلئے ہراسانی کا مقدمہ درج کرایا تھا ۔اس سلسلے میں نصیر کو گرفتار کرکے عدالتی تحویل میں دے دیا گیا۔ جیل سے ضمانت پر رہا ہونے کے بعد اس نے محمد ذکریا اور ان کی بیوی زاہد النساء اور وسیم النساء کے خلاف سرقہ کا ایک مقدمہ درج کروایا تھا اور تینوں نے عدالت میں خودسپردگی اختیار کرکے ضمانت حاصل کی تھی۔ اس کیس کے تحقیقاتی عہدیدار سب انسپکٹر چندا کرن ریڈی نے محمد ذکریا کی دکان واقع روبرو سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل پہنچ کر 8 ہزار روپئے رشوت کا مطالبہ کیا تھا۔انہوں نے یہ رقم ادا نہ کرنے پر چارج شیٹ داخل کرنے کی دھمکی دی۔ 28 مارچ 2009ء کو ذکریا نے ہمایوں نگر پولیس اسٹیشن پہنچ کر 4 ہزار روپئے بطور رشوت سب انسپکٹر کے حوالے کئے اس کے ساتھ ساتھ ذکریا نے پہلے ہی اینٹی کرپشن بیوروکو مطلع کردیا تھا ۔چندرا کرن ریڈی کو اے سی بی عہدیداروں نے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا لیکن سب انسپکٹر نے خود کو بچانے کیلئے رشوت کی رقم نگل لی تھی۔بعدازاں اس کے پیٹ سے کرنسی نوٹس برآمد کئے گئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT