Monday , September 24 2018
Home / ہندوستان / رضا مندی سے مذہبی تبدیلی کی اجازت

رضا مندی سے مذہبی تبدیلی کی اجازت

مظفر نگر 16 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام ) عدالت نے ایک 19 سالہ لڑکی کو جو دوسرے فرقہ سے تعلق رکھنے والے لڑکے کے ساتھ فرار ہوگئی تھی ،مل کر رہنے کی اجازت دیدی۔ اس لڑکی نے مقامی عدالت کو بتایا کہ وہ اپنی مرضی سے مذہب تبدیل کررہی ہے۔ چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ نریندر کمار نے اس لڑکی کا بیان قلمبند کرنے کے بعد کہ اس نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے اور اپنے شوہر

مظفر نگر 16 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام ) عدالت نے ایک 19 سالہ لڑکی کو جو دوسرے فرقہ سے تعلق رکھنے والے لڑکے کے ساتھ فرار ہوگئی تھی ،مل کر رہنے کی اجازت دیدی۔ اس لڑکی نے مقامی عدالت کو بتایا کہ وہ اپنی مرضی سے مذہب تبدیل کررہی ہے۔ چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ نریندر کمار نے اس لڑکی کا بیان قلمبند کرنے کے بعد کہ اس نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے اور اپنے شوہر کا مذہب قبول کیا ہے،کہا کہ وہ سنجیو کے ساتھ زندگی گذار سکتی ہے ۔ اس لڑکی کو کل عدالت میں پیش کیا گیا تھا اور طبی معائنے کے بعد اسے بالغ قرار دیا گیا ۔ اس لڑکی کے والدین نے سنجیو کے خلاف کم عمر لڑکی کے اغواء کا الزام عائد کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT