Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / رعیتو بازار میں آدھار کارڈ کی بنیاد پر پیاز کی فروخت

رعیتو بازار میں آدھار کارڈ کی بنیاد پر پیاز کی فروخت

صرف دو کیلو پیاز کیلئے طویل قطاریں، کئی گھنٹے انتظار

حیدرآباد۔/15ستمبر، ( سیاست نیوز) حیدرآباد میں رائے دہی اور آدھار کارڈ سے زیادہ اہم پیاز کا حصول ہوچکا ہے کیونکہ حکومت کی جانب سے رعیتو بازار میں رعایتی قیمت پر فروخت کی جارہی پیاز کے حصول کیلئے آدھار کارڈ دیکھ کر پیاز فروخت کی جارہی ہے۔ دونوں شہروں سے موصولہ شکایات کے بموجب رعیتو بازاروں میں موجود عہدیدار رعایتی قیمت پر پیاز کی فروخت کیلئے آدھار کارڈ طلب کررہے ہیں اور جن لوگوں کو پیاز فروخت کی جارہی ہے ان کی انگلی پر سیاہی کا نشان لگایا جارہا ہے۔ شہر حیدرآباد میں رائے دہی کے دوران اگر شناختی کارڈ یا آدھار کارڈ لازمی قرار دیا جانے لگے تو یقیناً رائے دہی کے فیصد میں گراوٹ ضرور آئے گی کیونکہ عموماً رائے دہی کے دن ایسا نہیں کیا جاتا مگر رعیتو بازار میں پیاز حاصل کرنے کیلئے صارفین کو آدھار کارڈ دکھانا ضروری ہوچکا ہے۔ رعیتو بازار میں حکومت تلنگانہ کی جانب سے 20روپئے کیلو فروخت کی جارہی پیاز کے حصول کیلئے صارفین کو انگلی پر نشان بھی لگوانا پڑ رہا ہے تاکہ اضافی پیاز خریدنے کیلئے وہ دوبارہ قطار میں نہ آئیں۔ الوال کے رعیتو بازار میں تقریباً 12گھنٹے طویل قطار میں کھڑے ہوکر لوگوں نے 20روپئے کیلو فروخت کی جارہی پیاز حاصل کی جبکہ صرف 2کیلو پیاز فی خاندان فراہم کی جارہی ہے۔ اس رعیتو بازار میں زائد از 8کاؤنٹرس پر پیاز کی فروخت کو یقینی بنایا جارہا ہے اور عوام جوق درجوق قطار میں کھڑے ہوکر 60تا 70روپئے بازار میں فروخت ہورہی پیاز کو رعایتی قیمت 20روپئے فی کیلو حاصل کررہے ہیں۔ ذرائع کے بموجب حکومت تلنگانہ کی جانب سے شہر کے مختلف علاقوں میں روزانہ 4.5 ٹن پیاز رعایتی قیمت پر فروخت کی جارہی ہے۔ رعیتو بازاروں کے ذریعہ فروخت کی جارہی پیاز کے حصول کیلئے گزشتہ ہفتہ کے آخری ایام یعنی ہفتہ اور اتوار کو عوام کی بڑی تعداد قطاروں میں کھڑی نظر آئی۔ ماہ اگسٹ سے جاری پیاز کی قیمت میں اضافہ کے سبب عوام بحالت مجبوری آدھار کارڈ دکھاتے ہوئے پیاز خرید رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT