Monday , January 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / رمس دواخانہ گروپ بندیوں کا شکار ،مریضوں کو مشکلات

رمس دواخانہ گروپ بندیوں کا شکار ،مریضوں کو مشکلات

عادل آباد /20 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مستقر عادل آباد کا

عادل آباد /20 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مستقر عادل آباد کا
RIMS دواخانہ گروپ بندیوں کے بنا ہر مریضوں کا خاطر خواہ علاج کرنے سے قاصر ہے جبکہ ضلع سے تعلق رکھنے والے دو ریاستی وزراء اور آٹھ اراکین اسمبلی RIMS دواخانہ پر عدم دلچسپی کا الزام تلگودیشم پارٹی قائد مسٹر یونس اکبانی نے اپنے خطاب کے دوران عائد کیا ۔ موصوف مستقر عادل آباد کے سنٹرل گارڈن میں تلگودیشم کی جانب سے منعقدہ ’’ منی مہارناڈو ‘‘ جلسہ سے مخاطب تھے ۔ مسٹر اکبانی نے اپنا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے کہا کہ RIMS دواخانہ میں 110 ڈاکٹرس کی مخلوعہ جائیدادیں ہونے کے باوجود ریاستی حکومت پر کرنے میں ناکام دکھائی دے رہی ہے ۔ موصوف نے ریاستی حکومت کی جانب سے جاری کاکتیہ مشن اسکیم پر الزام عائد کرتے ہوئے اس کو ’’ کمیشن مشن ‘‘ قرار دیا ۔ ریاستی حکومت کی ایک سالہ کارکردگی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ تحریک میں شہید ہونے والوں کے افراد نے خاندانوں کو حکومت کی جابن سے نظر انداز کرنے کے علاوہ ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی اور میناریٹیز طبقات کو ریاستی حکومت چیف منسٹر ہتھیلی میں جنت دکھانے کے طرز پر وعدے کر رہے ہیں ۔ مسٹر یونس اکبانی نے مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کی کارکردگی کی بھرپور ستائش کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ انتخابات کے بعد تلگودیشم ریاستی تلنگانہ میں برسر اقتدار ہوتے ہوئے تلنگانہ کو سنہری تلنگانہ بنایا جاسکتا ہے ۔ سابق رکن لوک سبھا مسٹر راتھوڑ رامیش نے اپنے خطاب میں پارٹی کو مزید مستحکم کرنے کا پارٹی اراکین کو مشورہ دیا اور دیگر سیاستی جماعتوں کے قائدین سے خوف زدہ نہ ہونے کی ہدایت دی ۔ مواضعات ، گرام پنچایت ، منڈل جات سطح پر پارٹی کے تحت خدمات انجام دینے پر ایک کو کمربستہ ہونے کا مشورہ دیا ۔ تلنگانہ ریاست قیام کی خاطر پارلیمانی اجلاس کے دوران اپنی جانب سے کردہ جدوجہد کا تذکرہ کیا ۔ جبکہ محترمہ سمن راتھوڑ اور دیگر قائدین بھی اپنے اپنے خطاب میں پارٹی اراکین کو متحد ہوکر پارٹی کیلئے کام کرنے کا مشورہ دیا ۔ ضلع عادل آباد کے صدر مسٹر پونم شیام سندر کی صدارت میں منعقدہ ’’ منی مہاناڈو ‘‘ میں یوتھ ، نرمل ، مدھول ، خانہ پور ، اور عادل آباد اسمبلی حلقہ جات سے ہزاروں مرد خواتین نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT