Thursday , November 23 2017
Home / دنیا / روسی جہاز گرانے کا دعویٰ محض پروپگنڈا : السیسی

روسی جہاز گرانے کا دعویٰ محض پروپگنڈا : السیسی

طیارہ حادثہ کی 10 نعشوں کی شناخت
ماسکو ۔ 3 نومبر (سیاست ڈاٹ کام)روس کی فضائی کمپنی کوگالی ماویا نے الزام عائد کیا ہے کہ گذشتہ ہفتے صحرائے سینا میں تباہ ہونے والا مسافر بردار طیارہ بیرونی عوامل کی وجہ سے حادثے کا شکار ہوا تھا۔ تاہم روس کی فیڈرل ایوی ایشن ایجنسی کے سربراہ نے کہا ہے کہ جہاز کی تباہی پر کسی قسم کی قیاس آرائی کرنا قبل ازوقت ہے۔ روسی ٹی وی سے گفتگو میں فیڈرل ایوی ایشن ایجنسی کے سربراہ الکساندر نیرادکو نے کہا کہ اس قسم کی بات چیت حقائق پر مبنی نہیں ہے۔ ادھر مصر کے صدر السیسی نے بی بی سی کودیے گئے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ جہاز کی تباہی کی وجہ کے بارے میں ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا تاہم انھوں نے جہادیوں کی جانب سے اس دعوے کو پروپیگنڈا قرار دیا ہے کہ یہ جہاز انھوں نے مار گرایا ہے۔ صدر کا کہنا تھا کہ یہ مصر کی سکیورٹی، استحکام اور ساکھ کو نقصان پہنچانے کا طریقہ ہے۔ خیال رہے کہ اس سے قبل فضائی کمپنی کے ایک اہلکار نے کہا تھا کہ یہ حادثہ بیرونی وجوہات کی بنا پر ہوا۔ شہری ہوا بازی کے ماہرین کی طرف سے طیارے کے ’بلیک باکس‘ سے ڈیٹا حاصل کر کے ابھی حادثے کی تحقیقات ہونا باقی ہیں۔

کوگالی ماویا نامی کمپنی کا ایئر بس اے 321 طیارہ صحرائی علاقے میں گذشتہ ہفتے کو گر کر تباہ ہو گیا تھا اور اس پر سوار تمام 224 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ اب اس فضائی کمپنی کا نام تبدیل کر کے میٹرو جیٹ رکھ دیا گیا ہے۔سینٹ پیٹرس برگ سے موصولہ اطلاع کے بموجب مصر میں روسی طیارہ کے حادثہ میں ہلاک ہوجانے والوں کی نعشیں روس روانہ کردی گئی ہیں جن میں سے پہلی دس نعشوں کو ان کے رشتہ داروں نے شناخت کرلیا ہے۔ میٹرو جیٹ کی ایربس A321-200 مصر کے شرم الشیخ سے سینٹ پیٹرس برگ جاتے ہوئے جزیرہ نما سینائی میں تباہ ہوگیا تھا جس میں طیارہ میں موجود تمام 224 مسافرین ہلاک ہوگئے تھے۔ مہلوک مسافرین کی اکثریت روسی شہریوں کی تھی جو مصر میں تعطیلات منانے کے بعد واپس لوٹ رہے تھے۔ دریں اثناء روس میں ہنگامی حالات کی وزارت سے وابستہ الیکسی اسمرنوف نے بتایا کہ جملہ 140 نعشیں اور زائد از100  انسانی جسم کے ٹکڑے دو سرکاری طیاروں کے ذریعہ سینٹ پیٹرس بگ لائی گئیں جبکہ تیسرا طیارہ بھی عنقریب کچھ نعشوں اور انسانی باقیات کو لیکر آج یہاں پہنچنے والا ہے۔ اب تک طیارہ حادثہ کے بارے میں مختلف تھیوریاں پیش کی جارہی ہیں جبکہ میٹرو جیٹ نے اس بات کی تردید کی ہیکہ طیارہ کسی کی پرزے کی خرابی یا عملہ کی غلطی سے حادثہ کا شکار ہوا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT