Tuesday , September 18 2018
Home / دنیا / روسی صدر پوٹن نے کریمیا کو ’آزاد ملک‘ تسلیم کرلیا

روسی صدر پوٹن نے کریمیا کو ’آزاد ملک‘ تسلیم کرلیا

ماسکو ، 18 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) روس نے یوکرین کے نیم خود مختار علاقہ کریمیا کو ایک آزاد ملک کے طور پر تسلیم کرلیا ہے جسے تجزیہ کار کریمیا کے روس کے ساتھ الحاق کی جانب پہلا اقدام قرار دے رہے ہیں اور جو دوسری جنگ عظیم کے بعد سے یورپ کی سرحدوں کی سب سے نمایاں ترتیب نو کا نقیب ہوگا۔ ’کریملن‘ نے پیر کو اپنی ویب سائٹ پر ایک حکم نامہ جاری کیا

ماسکو ، 18 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) روس نے یوکرین کے نیم خود مختار علاقہ کریمیا کو ایک آزاد ملک کے طور پر تسلیم کرلیا ہے جسے تجزیہ کار کریمیا کے روس کے ساتھ الحاق کی جانب پہلا اقدام قرار دے رہے ہیں اور جو دوسری جنگ عظیم کے بعد سے یورپ کی سرحدوں کی سب سے نمایاں ترتیب نو کا نقیب ہوگا۔ ’کریملن‘ نے پیر کو اپنی ویب سائٹ پر ایک حکم نامہ جاری کیا جس پر صدر ولادیمیر پوٹن کے دستخط ہیں۔ حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ روس ’جمہوریہ کریمیا‘ کو آزاد مملکت تسلیم کرتا ہے

اور ماسکو نے یہ فیصلہ ’’کریمیا کے عوام کی خواہشات کے پیشِ نظر‘‘ کیا ہے۔ سرکاری بیان کے مطابق روس کی جانب سے کریمیا کو آزاد مملکت تسلیم کرنے کا فیصلہ فوری طور پر نافذ العمل ہوگا۔ روسی نشریاتی اداروں کے مطابق صدر پیوٹن کریمیا کے مسئلے پر منگل کو روسی پارلیمان کے دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرکے اپنی حکومت کے موقف کی وضاحت کریں گے۔ غالب امکان ہے کہ روسی پارلیمان کریمیا کی جانب سے الحاق کی درخواست کو منظوری دیدے گی، جس کے کئی ارکان پہلے ہی سے اس اقدام کی حمایت کر رہے ہیں۔ خیال رہے کہ کریمیا میں اتوار کو منعقدہ ریفرنڈم میں 97 فی صد رائے دہندگان نے روس کے ساتھ الحاق کے حق میں ووٹ دیا تھا جس کے بعد پیر کو کریمیا کی پارلیمان نے یوکرین سے آزادی کا اعلان کرتے ہوئے ماسکو حکومت سے بطور جمہوریہ الحاق کی باقاعدہ درخواست کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT