Thursday , January 18 2018
Home / دنیا / روسی عہدیداروں پر امریکہ اور یوروپی یونین کی تحدیدات

روسی عہدیداروں پر امریکہ اور یوروپی یونین کی تحدیدات

واشنگٹن ۔ 17 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ اور یوروپی یونین نے کئی سرکردہ روسی عہدیداروں بشمول صدارتی رفقاء اور قانون سازوں پر تحدیدات عائد کردی ہیں۔ کریمیا میں روس کی مداخلت کو یوکرین کی سالمیت کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے یہ اقدام کیا گیا جس کے باعث سرد جنگ کے بعد مشرق ۔ مغرب بحران انتہائی سنگین ہوگیا ہے۔ وائیٹ ہاؤس نے آج یہ اعلان ا

واشنگٹن ۔ 17 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ اور یوروپی یونین نے کئی سرکردہ روسی عہدیداروں بشمول صدارتی رفقاء اور قانون سازوں پر تحدیدات عائد کردی ہیں۔ کریمیا میں روس کی مداخلت کو یوکرین کی سالمیت کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے یہ اقدام کیا گیا جس کے باعث سرد جنگ کے بعد مشرق ۔ مغرب بحران انتہائی سنگین ہوگیا ہے۔ وائیٹ ہاؤس نے آج یہ اعلان اُس وقت کیا جب کہ صدر امریکہ براک اوباما نے خصوصی حکم جاری کرتے ہوئے روس کی یوکرین میں مداخلت پر تحدیدات عائد کردیں ۔ یوکرین کے سابق صدر وکٹر یانوکووچ پر بھی تحدیدات عائد کی گئی ہیں۔

وائیٹ ہاؤس نے کہاکہ امریکہ اُن انفرادی شخصیتوں کو بھی جوابدہ بنائے گا جنھوں نے اپنے وسائل یا اثر و رسوخ کا استعمال کرتے ہوئے روسی حکومت کی طرف سے اس عمل میں حصہ لیا۔ بیان میں کہا گیاہے کہ روسی قیادت نے کئی انفرادی شخصیتوں کی مدد اور تائید حاصل کی ہے جس کا ہمیں پتہ ہے ، ہماری اولین توجہ ان انفرادی شخصیتوں کی شناخت کرتے ہوئے اُن کے شخصی اثاثہ جات کونشانہ بنانے پر ہے ۔ یہ اعلان ایسے وقت کیا گیا جبکہ کچھ دیر قبل ہی کریمیا کی پارلیمنٹ نے اس علاقہ کو آزاد مملکت قرار دیا تھا۔ ایک دن قبل یہاں ریفرنڈم کرایا گیا جس کی بنیاد پر پارلیمنٹ نے یہ اعلان کیا۔ قبل ازیں یوروپی یونین نے بھی 21 افراد کے سفر پر امتناع اور ان کے اثاثہ جات منجمد کرنے کا اعلان کیا جن کا کریمیا میں بدامنی سے تعلق رہا ہے ۔ یوروپی یونین کے وزرائے خارجہ نے 13 روسی عہدیداران اور کریمیا سے تعلق رکھنے والے 8 یوکرین کے عہدیداران کے خلاف سفری امتناع اور اُن کے اثاثہ جات منجمد کرنے کا اعلان کیا ۔ انھوں نے تمام کی تفصیلات نہیں بتائی اور کہا کہ کل برسرعام اس کا اعلان کیا جائے گا ۔

لیتھونیا کے وزیر خارجہ لیناز لنکی ویشیس نے ٹوئٹر پر لکھا کہ آئندہ چند دنوں میں یوروپی یونین کے مزید سخت اقدامات سامنے آئیں گے ۔ نئے حکمنامہ کے ذریعہ امریکی ٹریژری سکریٹری جیک لیو کو یہ اختیار دیا گیا کہ وہ سکریٹری آف اسٹیٹ جان کیری کے ساتھ مل کر تحدیدات کے بارے میں فیصلہ کریں ۔ وائیٹ ہاؤس کے مطابق ان تحدیدات کے ذریعہ ایسی انفرادی شخصیتوں کو نشانہ بنایا گیا ہے جنھوں نے روسی حکومت میں اپنا اثر و رسوخ استعمال کیا اور جو یوکرین میں ابتر صورتحال کے لئے ذمہ دار ہیں۔ صدر امریکہ براک اوباما نے سفارتی حل کو اولین ترجیح قرار دیتے ہوئے روس کو مزید تحدیدات کا انتباہ دیا اور کہا کہ یوکرین کے صوبہ کریمیا میں اُسے مداخلت کاری سے گریز کرنا چاہئے ۔ امریکہ نے جوبائیڈن کو یوروپ روانہ کیا ہے تاکہ روسی کارروائی کے خلاف تائید حاصل کی جاسکے ۔

کریمیا کی پارلیمنٹ کا آزادی کا اعلان
کریمیا کی پارلیمنٹ نے ریفرنڈم کے بعد علاقہ کی آزادی کا اعلان کردیا ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ اس علاقہ کی روس میں شمولیت کی بھی توثیق کی ہے ۔ کریمیا کے نائب وزیراعظم نے آج اعلان کیا کہ علاقہ میں نیا سنٹرل بنک قائم کیا جائے گا اور توقع ہے کہ روس سے 30ملین ڈالر کی مدد حاصل ہوگی۔ کریمیا کی روس میں شمولیت پر ریفرنڈم میں عوام نے واضح اکثریت کے ساتھ اپنی تائید کی ہے ۔ صدر روس ولادیمر پوٹین اس مسئلے پر منگل کو پارلیمنٹ سے خطاب کرنے والے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT