Saturday , December 16 2017
Home / دنیا / روسی فضائی حملوں میں 1000 شامی شہری ہلاک

روسی فضائی حملوں میں 1000 شامی شہری ہلاک

مہلوکین میں 200 بچے بھی شامل، شامی مبصر ادارہ کا دعویٰ
بیروت ۔ 20 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) شام کے ایک مبصر ادارہ نے آج کہا کہ اس جنگ زدہ ملک میں چار ماہ قبل روسی فضائی حملوں کے آغاز کے بعد سے تاحال 1000 شامی شہری ہلاک ہوچکے ہیں۔ برطانیہ میں واقع شامی مبصر ادارہ برائے انسانی حقوق نے کہا ہیکہ ایک روسی فضائی حملے 30 ستمبر سے شروع ہوئے تھے جس کے نتیجہ میں 1,015 شامی شہری ہلاک ہوئے ہیں جن میں 200 بچے بھی شامل ہیں۔ یہ ادارہ بالعموم شام سے موصول ہونے والی اطلاعات پر انحصار کرتا ہے۔ اس ادارہ نے کہا کہ روسی حملوں میں اسلامک اسٹیٹ (داعش) کے 1,141 جنگجو بھی ہلاک ہوئے ہیں۔ دیگر مہلوکین میں القاعدہ سے ملحقہ شامی اپوزیشن تنظیم النصرہ فرنٹ کے جنگجو بھی شامل ہیں۔ محض گذشتہ 3 ہفتوں کے دوران 700 افراد کی ہلاکت کے ساتھ شام میں حملوں اور دیگر پرتشدد واقعات میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 3,049 تک پہنچ گئی ہے۔ روس نے جو حکومت شام کا ایک کٹر حامی ہے اور حکومت کے تعاون سے فضائی حملے کررہا ہے، یہ دعویٰ بھی کیا ہیکہ وہ محض آئی ایس اور دیگر دہشت گرد گروپوں کو اپنے حملوں کا نشانہ بنارہا ہے لیکن انسانی حقوق کے کارکنوں اور شامی حکومت کے باغیوں نے ماسکو پر الزام عائد کیا ہیکہ وہ داعش سے کہیں زیادہ حکومت کے مخالف اعتدال پسند گروپوں اور اسلامی اپوزیشن جنگجوؤں کو نشانہ بنارہا ہے۔ تاہم روس اس قسم کے الزامات کو محض بکواس قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT