Tuesday , December 19 2017
Home / Top Stories / ’’روس کی ایماء پر بشار الاسد کیساتھ بیٹھنا ناممکن ‘‘

’’روس کی ایماء پر بشار الاسد کیساتھ بیٹھنا ناممکن ‘‘

اُردغان نے عراق میں فوج بھیجنے کے تنازعہ کی اصل وجہ بتائی
استنبول ۔ 26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر ترکی رجب طیب اردغان نے کہا ہے کہ ترک فوجی ،عراقیوں کو تربیت دینے کے لئے عشیقہ کیمپ بغداد کے علم اور مطالبہ پر بھیجے گئے، تاہم انہوں نے اس امر کی وضاحت نہیں کی کہ عراق میں موجود ترک فوج کو واپس بلوایا جا رہا ہے یا نہیں؟انہوں نے کہا کہ شمالی عراق میں ترک فوج کی موجودگی کا تنازعہ ، روس کی درخواست پرشام، عراق، روس اور ایران کے درمیان طئے پانے والے چار ملکی معاہدے کے میں ترکی کے انکار کے بعد پیدا ہوا۔ ’’عراق اور ترکی کے درمیان تعلقات اچھے تھے۔ عراقی وزیر اعظم العبادی کے دورہ ترکی کے موقع پر ہم نے عراق میں ہونے والی پیش رفت پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔‘‘ اُردغان کا مزید کہنا تھا کہ “عراق میں داعش کے داخلے کے بعد مدد کی درخواست کی جاتی رہی، ہم نے بغداد کو بتایا تھا کہ ترکی یہ مدد دینے کو تیار ہے۔ ہم نے عراق سے مطالبہ کیا تھا کہ اس مقصد کیلئے ہمیں مناسب موقع پر عراق میں فوجی بیس بنانے کی اجازت دی جائے۔ عراقیوں کی جانب سے ہمیں اس رضامندی دے دی گئی۔ گذشتہ برس کے اختتام اور مارچ کے اوائل میں شمالی عراق میں عشیقہ کیمپ اس مقصد کیلئے مخصوص کر دیا گیا۔

اُردغان نے ایک شخص کو پْل سے چھلانگ لگانے سے بچا لیا
استنبول۔ 26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ترک صدر رجب طیب اردغان نے ایک شخص سے گفتگو کرتے ہوئے اْسے ایک پْل پر سے چھلانگ لگا کر خود کْشی کرنے سے بچا لیا۔ یہ بات ترک صدر کے دفتر کی جانب سے بتائی گئی ہے۔ جمعہ کو منظر عام پر آنے والی ٹی وی فوٹیج میں دکھایا گیا ہے کہ اردغان کی گاڑیوں کا قافلہ استنبول کے باسفورس پْل پر رْکا، جہاں ایک شخص غالباً چھلانگ لگانے والا تھا۔ اس فوٹیج میں سنا جا سکتا ہے کہ کیسے اُردغان کے قافلے میں شامل افراد اْس شخص کو کہہ رہے ہیں کہ ترک صدر اْس سے بات کرنا چاہتا ہے۔ ترک صدر کے ساتھ مختصر گفتگو سے پتہ چلا کہ وہ شخص گھریلو حالات سے دل برداشتہ تھا۔ ترک صدر نے اس شخص کی مدد کرنے کا وعدہ کیا۔
فلپائنی مسلم باغیوں کے
عیسائی بستیوں پر حملے
منیلا ۔ 26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) فلپائن کے ایک فوجی ترجمان نے آج ہفتے کے روز کہا ہے کہ کرسمس کے تہوار پر ملک کے شورش زدہ جنوبی حصے میں سرگرم مسلمان باغیوں نے عیسائی افراد پر حملے کر کے چودہ افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ فوج کے مطابق حملے عیسائی اکثریتی والے نو دیہاتوں پر کیے گئے۔ حملوں میں بانگسامورو اسلامک فریڈم فائٹرز نامی تنظیم کو ملوث بتایا جا رہا ہے۔
تہران میں مجوزہ پارلیمانی انتخابات میں امیدواروں کی ریکارڈ تعداد
تہران۔ 26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) تہران میں فروری میں مجوزہ پارلیمانی انتخابات میں امیدواروں کی ریکارڈ تعداد شرکت کرے گی۔ وزارتِ داخلہ کے مطابق ایرانی پارلیمان کی 290 نشستوں کیلئے تقریباً 12,000 امیدوار ہوں گے، جن میں 1100 سے زیادہ خواتین بھی شامل ہیں۔ اس سے پہلے 2012ء میں منعقدہ انتخابات میں امیدواروں کی تعداد تقریباً 5,000 رہی تھی۔ یہ انتخابات اس سال وسط جولائی میں ایران اور مغربی دنیا کے مابین طئے پانے والے ایٹمی معاہدے کے بعد سے سیاسی رجحانات کو جاننے کا پہلا موقع ہوں گے۔
گزشتہ تینوں آئینی مدتوں میں پارلیمان پر قدامت پسندوں اور سخت موقف کی حامل طاقتوں کو غلبہ حاصل رہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT