Monday , November 20 2017
Home / بچوں کا صفحہ / روشنی کی رفتار پکڑلی

روشنی کی رفتار پکڑلی

بچو!روشنی کو پکڑنے کی طاقت ابھی تک ہم نے بلیک ہول میں ہی دیکھی تھی ۔ ( محض تصور کی آنکھ سے اسے سچ مچ دیکھنا تو ناممکن ہے ۔ کہ اس کی قوت ثقل روشنی کو بھی باہر نہیں جانے دیتی ۔ رولینڈ انسٹی ٹیوٹ فار سائنس ، کیمریج امریکہ میں کام کر رہی ایک خاتون ماہر طبیعات ( فزیسسٹ ) ڈاکٹر ینی ویسترگارد نے کچھ مخصوص ایٹموں کا ایک ایسا بڑا گچھا منفی 278 ڈگری سینٹی گریڈ پر تیار کیا ہے کہ جو اپنے میں سے گزرنے والی روشنی کی رفتار کو بیحد ہلکا کردیتا ہے ۔ اس مادے میں سے جب روشنی گذاری جاتی ہے تو اس کی رفتار 71 کیلومیٹر فی گھنٹہ یا صرف 17 میٹر فی سیکنڈ رہ جاتی ہے ۔ جبکہ خلاء میں یہ رفتار لگ بھگ 3 لاکھ کیلومیٹر فی سکینڈ ہوتی ہے ۔ دلچسپی بات یہ ہے کہ ڈاکٹر لین نے اس کنڈینٹس مادے کا نام ہندوستانی سائنسداں ستیندر ناتھ بوس 1894-1971 اور البرٹ آئن سٹائن کے نام پر ’’ بوس آئنسٹائن کنڈینیسٹ ’’ رکھا ہے ۔ انہی دنوں سائنسدانوں نے ایسے مادے کے امکان کا تصور پیش کیا تھا جسے آج ڈاکٹر یسنی نے عملی شکل دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT