روٹومیک گروپ کے یوپی میں 14 بینک کھاتے منجمد

قرض نادہندگی پر بینک آف بڑودہ ،یوبی آئی اور آئی او بی کی شکایت پرکارروائی

نئی دہلی 20 فروری (سیاست ڈاٹ کام) مشہور برینڈ کی قلم ساز کمپنی ’روٹومیک پین‘ گروپ کے خلاف سی بی آئی اور ای ڈی کی طرف سے جاری کارروائیوں کے بعد محکمہ انکم ٹیکس نے ان کے خلاف مبینہ ٹیکس چوری کی تحقیقات کے ضمن میں 14 بینک کھاتوں کو منجمد کردیا ہے۔ عہدیداروں نے کہاکہ اترپردیش کے مختلف بینک شاخوں میں ان کے کھاتے کل رات منجمد کئے گئے۔ بینک آف بروڈہ، انڈین اوورسیس بینک اور یونین بینک آف انڈیا نے شکایات درج کرائی ہیں جس کے نتیجہ میں مزید تین بینک کھاتے منجمد کئے گئے۔ اس طرح جملہ منجمد کھاتوں کی تعداد 14 ہوگئی۔ دریں اثناء محکمہ انکم ٹیکس نے سی بی آئی اور ای ڈی کی مدد سے تمام اخراج کی بندرگاہوں کو روٹومیک پینس کمپنی کے کوٹھاری کے ملک سے باہر جانے کی کوشش کے انسداد کیلئے سخت چوکسی اختیار کرنے کی ہدایت دی ہے۔ اس ادارہ سے دیرینہ ٹیکس بقایا جات کی وصولی کے لئے عبوری قرقی کی گئی ہے۔ باور کیا جاتا ہے کہ یہ ادارہ 85 کروڑ روپئے کا ٹیکس باقی ہے۔ محکمہ انکم ٹیکس نے جنوری میں اس ادارہ کے تین بینک کھاتوں کو منجمد کیا تھا۔ کانپور میں واقع روٹومیک گروپ کی مالیاتی بدعنوانیوں اور 3,695 کروڑ روپئے کے بینک قرض اسکام کے ضمن میں سی بی آئی اور انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ (ای ڈی) کی طرف سے تحقیقات کی جارہی ہیں۔ روٹومیک گروپ کو سات بینکوں کے کنزورشیم نے ہزاروں کروڑ روپئے کے قرض دیا تھا۔ سی بی آئی نے روٹومیک گلوبل پرائیوٹ لمیٹیڈ اس کے ڈائرکٹر وکرم کوٹھاری، ان کی بیوی سادھنا، بیٹے راہول اور چند غیر شناخت شدہ بینک عہدیداروں کے خلاف بینک آف بڑودہ کی شکایت پر ایک فوجداری مقدمہ درج کرتے ہوئے گزشتہ روز کئی ٹھکانوں پر دھاوے کیا تھا۔ سی بی آئی کے عہدیداروں نے کہا ہے کہ بینک آف بڑودہ کی شکایت میں یہ الزام عائد کیا گیا تھا کہ سازشیوں نے بینکوں کے کنزورشیم کو سود کے عنصر کے بشمول مجموعی طور پر 3,695 کروڑ روپئے کے بینک قرضوں کی واپسی کے معاملہ میں دھوکہ دیا ہے۔ بینکوں سے حاصل کردہ اصل قرض کی اساسی رقم 2,919 کروڑ روپئے ہے۔ ای ڈی نے ان تمام کے خلاف رقمی ہیر پھیر کا ایک مقدمہ درج کرلیا ہے۔ ای ڈی تحقیقات میں اس بات کا پتہ بھی چلایا جائے گا کہ بینکوں کو دھوکہ دیتے ہوئے حاصل کردہ قرضوں کی رقومات کا ملزمین کی جانب سے آیا غیر قانونی اثاثوں کے حصول اور کالا دھن بنانے کے لئے استعمال تو نہیں کیا گیا ہے۔ ارب پتی جوہری نیروو مودی اور ان کے ماموں میہول چوکسی 11,400 کروڑ روپئے بینک دھوکہ دہی اسکام کے بعد ملک سے فرار ہوچکے ہیں۔ ان کے بعد روٹومک کا دوسرا بڑا بینک دھوکہ دہی اسکام منظر عام پر آیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT