Thursday , February 22 2018
Home / شہر کی خبریں / روڈی شیٹر تنویر کی ماں ہائیکورٹ سے رجوع ‘ پولیس کا دھمکی آمیز رویہ

روڈی شیٹر تنویر کی ماں ہائیکورٹ سے رجوع ‘ پولیس کا دھمکی آمیز رویہ

حیدرآباد 20 نومبر (سیاست نیوز) ایس آر نگر پولیس اسٹیشن میں روڈی شیٹر محمد معراج خان عرف تنویر کو اذیتیں دیئے جانے کے نتیجہ میں اُس کی ماں نے ہائیکورٹ سے رجوع ہوکر پولیس کے خلاف کارروائی کی درخواست کی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ عشرت بیگم کو ایس آر نگر پولیس یہ دھمکی دے رہی ہے کہ ہائیکورٹ میں داخل کی گئی رٹ درخواست سے فی الفور دستبرداری اختیار کرلیں ورنہ اُن کے دوسرے بیٹوں کو فرضی مقدمات میں ماخوذ کیا جائے گا اور اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔ عشرت بیگم نے ہائیکورٹ میں رٹ درخواست داخل کرتے ہوئے پولیس پر الزام عائد کیا ہے کہ 15 نومبر کو اُن کے بیٹے تنویر اور اُس کے ایک ساتھی عابد بن خالد کو حراست میں لے لیا گیا تھا اور انھیں عدالت میں پیش کرنے کے بجائے غیرقانونی طور پر پولیس اسٹیشن میں رکھ کر 4 دن تک تھرڈ ڈگری کا استعمال کرتے ہوئے جسمانی اذیتیں دی گئیں۔ روڈی شیٹر نے موبائیل فون کی مدد سے پولیس اسٹیشن کے باتھ روم میں اُسے دی گئی اذیتوں کی ویڈیو لیکر اپنی ماں عشرت بیگم کو واٹس اپ کے ذریعہ روانہ کیا۔ اس ویڈیو کو تنویر کی ماں نے سوشل میڈیا پر عام کردیا جس کے نتیجہ میں پولیس کے سینئر اعلیٰ عہدیدار اِس معاملہ کی تحقیقات پر مجبور ہوگئے۔ باور کیا جاتا ہے کہ محمد معراج خان عرف تنویر پر علاقہ یلاریڈی گوڑہ میں سی سی ٹی وی کو نقصان پہنچانے کا ایک فرضی مقدمہ درج کرتے ہوئے اُسے تفتیش کے نام پر اذیتیں دی گئیں۔ جس میں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ تنویر نے پولیس کی جانب سے مجسٹریٹ کے روبرو پیش کئے جانے پر جسم پر موجود زخموں کے نشانات بتائے جس پر مجسٹریٹ نے اُسے متعلقہ پولیس کے حوالہ کرنے کے بجائے بنجارہ ہلز پولیس کو اس روڈی شیٹر کی نگرانی اور علاج کی ذمہ داری دی تھی۔ ایس آر نگر پولیس عملہ نے روڈی شیٹر تنویر پر تھرڈ ڈگری کا استعمال کرتے ہوئے اُسے ایک کیس میں ماخوذ کیا اور اُسے خوفزدہ کرنے کی کوشش کی۔ تنویر کی ماں نے بتایا کہ ڈائرکٹر جنرل آف پولیس مسٹر ایم مہندر ریڈی کے فرینڈلی پولیسنگ کانسپٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایس آر نگر پولیس نے اُن کے بیٹے کو غیر ضروری اذیتیں دی اور نشانہ بناتے ہوئے اُسے فرضی مقدمات میں ماخوذ کیا۔ انسپکٹر ایس آر نگر مسٹر محمد وحیدالدین نے اس سلسلہ میں بتایا کہ روڈی شیٹر کے جسم پر موجود زخموں کی تحقیقات کی جارہی ہے اور اُسے پولیس اسٹیشن میں اذیتیں نہیں دی گئیں۔

TOPPOPULARRECENT