Tuesday , December 18 2018

روہتک عصمت ریزی و قتل ،8 نوجوان گرفتار

روہتک ۔ 9 فبروری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) ذہنی عدم توازن کی مریض ایک نیپالی خاتون کی بے رحمی کے ساتھ عصمت ریزی اور قتل کے الزام میں 8 نوجوانوں کو گرفتار کرلیا گیا جبکہ مقدمہ کے ایک ملزم نے جس نے اس گھناؤنے جرم میں حصہ لیا تھا مبینہ طورپر خودکشی کرلی ۔ ہریانہ پولیس پر اس معاملے سے نمٹنے کے سلسلے میں سخت تنقید کی جارہی ہے ۔ گرفتاریوں کا اعلان کرتے ہوئے پولیس نے دعویٰ کیا کہ اُس نے اس واقعہ کا پردہ فاش کردیا ہے ۔ ڈی جی پی یش پال سنگھل نے مقام واردات کا دورہ کیا ۔ انھوں نے کہا کہ گرفتار ملزم 20 سال کے آس پاس کی عمر کے ہیںاور عادی مجرم معلوم ہوتے ہیں۔ اس مقدمہ کا راز حل کرلیا گیا ہے ۔ 9 میں سے 8 نوجوانوں کو گڈی کھیرا دیہات سے گرفتار کرلیا گیا ہے جو روہتک سے 9 کیلومیٹر کے فاصلے پر ہے ۔ ایک نیپالی جس کی شناخت سنتوش کی حیثیت سے کی گئی ہے ملزمین میں شامل تھا ۔ ایک اور ملزم جو اس مقدمہ میں گرفتار کیا گیا راجیش عرف گھوچاڑو ، سنیل عرف شیلا ، سرور عرف بلو ، منبیر ، سنیل عرف مادھا ، پون ، پرمود عرف پدم شامل ہیں ۔ روہتک کے ایس پی ششانک آنند نے کہا کہ نواں ملزم شیلکرام نے مبینہ طورپر خودکشی کرلی ہے ۔ اُس نے زہریلی گولیاں کھا لی تھیںکیونکہ پولیس نے اُس کا سراغ پالیا تھا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT