Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / روہت ویمولہ کو خودکشی پر مجبور کرنے والے ملزمین کی گرفتاری پر زور

روہت ویمولہ کو خودکشی پر مجبور کرنے والے ملزمین کی گرفتاری پر زور

حیدرآباد یونیورسٹی کے حالات میں روز بروز تبدیلی، پروفیسر گالی ونود کمار کی پریس کانفرنس

حیدرآباد۔24اپریل(سیاست نیوز)حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے پی ایچ ڈی طالب علم روہت ویمولہ کی خودکشی کو عرصہ گذر جانے کے بعد بھی روہت ویمولہ کو خودکشی کے لئے مجبور کرنے والے ہنوز آزاد گھوم رہے ہیںجبکہ خاطیوں کے خلاف ایس سی ‘ ایس ٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے باوجود اسکے روہت ویمولہ کی خودکشی کو بنیاد بناکر سیاست کرنے والی سیاسی جماعتیں خاطیوں کی گرفتاری کے لئے مرکز او رریاستی حکومتوں پر دبائو ڈالنے میںپوری طرح ناکام ہوگئی ہیں۔ پرنسپل لاء کالج عثمانیہ یونیورسٹی پروفیسر گالی ونود کمار نے آج یہاں نیو پریس کلب سوماجی گوڑہ میںمنعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران یہ بات کہی۔ انہوں نے کہاکہ روہت ویمولہ کی خودکشی کے بعد جن سیاسی جماعتوں نے روہت ویمولہ کی خودکشی کو موضوع بناکر اپنی سیاسی روٹیاں سینکیں آج وہ سیاسی جماعتیں خاموش تماشائی بنی ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سیاسی اور سماجی تنظیمیں روہت ویمولہ کی حمایت میںاحتجاج کررہے طلبہ سے ہمدردی کے نام پر یونیورسٹی پہنچ کر اشتعال انگیز تقاریر کررہے ہیں جس کے باعث یونیورسٹی کے حالات میں سدھار نہیںآرہا اور طلبہ کی تعلیم بھی متاثرہورہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ روہت ویمولہ کی خودکشی اور یونیورسٹی میںجاری احتجاج سے سیاسی جماعتوں کا اظہار یگانگت اس وقت تک ثابت نہیں ہوگا جب تک روہت کی خودکشی پر سیاست کرنے والی سیاسی جماعتیں روہت ویمولہ ایکٹ کے نفاذ تک سنجیدگی کے ساتھ جدوجہد نہیں کریںگے اور متاثرین کے ساتھ انصاف کے لئے مسلسل احتجاج کو ترجیح نہیں دیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT